ہالی ووڈ فلم’’ڈاکٹرسٹرینج‘‘ تنکے کے سہارے کے مترادف

2016 ,نومبر 7



 کراچی(مانیٹرنگ ڈیسک): بالی ووڈ فلموں پر پابندی کے باعث مسائل کاشکار پاکستانی سینما گھروں کے لیے ہالی ووڈ فلم’’ڈاکٹرسٹرینج‘‘ تنکے کے سہارے کے مترادف ہے۔اسکاٹ ڈیریکسن کی ہدایات میں بننے والی اس فلم میں بینڈکٹ کمبربیچ نے مرکزی کردار ادا کیا ہے جب کہ دیگر کاسٹ میں مائیکل اسٹال برگ، چیویٹل ایجیوفور، ریچل میکیڈم، میڈز میکلسین اورٹیلڈا سوائنٹن شامل ہیں۔ فلم کی کہانی سٹیون سٹرینج نامی ایک ایسے ماہر نیورو سرجن پر مبنی ہے جس کا کیرئیر ایک خطرناک کار حادثے کے بعد تباہ و برباد ہو جاتاہے کیونکہ اس کے ہاتھ مکمل طور پر کام نہیں کرپاتے تاہم وہ ہار نہیں مانتا اور حالات کامقابلہ کرتے ہوئے مشرقی ادویات کے لیے کھٹمنڈو نیپال پہنچ جاتا ہے تاہم اس تلاش کے دوران وہ مشرقی فنون کی غیر معمولی طاقت حاصل کر کے برائی کے خاتمے کی جنگ پر نکل پڑتا ہے۔اس فلم کی کہانی کا پلاٹ دیگر سپر ہروز فلموں کی طرح ہے لیکن اسکے مسحور کن ویژول ایفیکٹس اسے دیگر فلموں کی فہرست میں نمایاں کرتے ہیں اس لیے یہ کہنا غلط نہیں کہ یہ سپر ہیروز فلم میں تازہ ہوا کا جھونکا ہے، فلم کی ایک اور خاص بات اس کے مزاح اور معنی خیز برجستہ مکالمہ دیکھنے والوں کو فلم سے باندھے رکھتے ہیں ۔فلم کے آخر میں یہ یقین دہانی بھی کروائی گئی ہے کہ ’’ڈاکٹر سٹرینج‘‘ کا دوسرا سلسلہ بھی جلد فلم بینوں کے لیے پیش کیا جائے گا جس میں وہ ’’تھور‘‘ کے ساتھ اسکرین شیئر کرتے نظر آئیں گے۔ 

متعلقہ خبریں