ایک سو ایک سالہ بوڑھا جنسی زیادتی کا شوقین

2016 ,دسمبر 20



برطانیہ (شفق ڈیسک) برطانیہ کی قانونی تاریخ میں 101سالہ رالف کلارک کو سب سے معمر مجرم کی حیثیت حاصل ہوگئی ہے۔ رالف چھوٹے بچوں، جن کی عمر 4 سال بھی ہوتی تھی، کو اپنے باغ کے شیڈ میں جنسی زیادتی کا نشانہ بنایا کرتا تھا۔ بچوں کیخلاف جنسی زیادتی پر عدالت نے اسے 13سال قید کی سزا سنائی ہے۔ سابقہ ڈرائیو نے یہ جرائم 1974ء سے 1983ء کے درمیان کیے۔رالف کا تعلق ارڈنگٹن، برمنگھم سے ہے۔ اس نے دو ہفتے پر مشتمل مقدمے کے دوران 9 سے 14 سال تک کے بچوں کے ساتھ 9 جنسی جرائم کا اعتراف کیا۔ پچھلے ہفتے جب مارچ 1915ء میں پیدا ہونے والے رالف کو عدالت نے 21جرائم میں سزا سنائی تو اس نے کسی قسم کا رد عمل ظاہر نہیں کیا۔ابھی تک یہ فیصلہ نہیں ہوسکا کہ رالف کو جیل بھیجا جائے گا یا بوڑھوں کے لیے کسی محفوظ عمارت میں رکھا جائے گا۔ رالف پر الزام تھا کہ وہ 3 سے 4 سال کے بچوں پر بھی جنسی زیادتی کرتا تھا اس کے علاوہ اس نے تھوڑی بڑی عمر کے بچوں کو رشوت اور دھمکی دے کر اپنا منہ بند رکھنے پرمجبور کیا۔ جس وقت عدالت فیصلہ سنا رہی تھی، اس وقت عدالت میں موجود وہ تین افراد،جو رالف کی جنسی ہوس کا نشانہ بنے تھے، روپڑے۔ رالف کا نشانہ بننے والے ایک شخص نے عدالتی فیصلہ سننے کے بعد کہا کہ اسے جیل میں ہی مرنا اور دوزخ میں سڑنا چاہے۔

متعلقہ خبریں