جنسی تعلق ذہنی بیماری کا سبب

2016 ,دسمبر 18



بوسٹن (شفق ڈیسک) جنسی تعلق کے ذریعے متعدد جسمانی بیماریوں کے پھیلاؤ کے بارے میں سب جانتے ہیں لیکن کیا جنسی تعلق سے دماغی بیماریاں بھی منتقل ہو سکتی ہیں؟ اس اہم سوال کا جواب تلاش کرنیوالے سائنسدانوں نے امریکا میں کی گئی حالیہ تحقیقات کے بعد خطرے کی گھنٹی بجا دی ہے۔ جانز ہاپکنز یونیورسٹی کے سائنسدانوں کا کہنا ہے کہ تحقیق ظاہر کرتی ہے کہ جن مردوں میں جنسی تعلق سے منتقل ہونیوالے انفیکشن کی شرح زیادہ پائی جاتی ہے ان میں دماغی بیماریوں کی شرح بھی زیادہ پائی جاتی ہے۔ اس تحقیق کے دوران 18 سے 65 سال عمر کے 808 افراد کے خون کے نمونے لے کر تجزیہ کیا گیا۔ ان افراد کو مختلف گروپوں میں تقسیم کیا گیا تھا۔ پہلے گروپ میں شامل 277 افراد میں کوئی ذہنی بیماری موجود نہیں تھی۔ دوسرے گروپ کے 261 افراد شیزوفرینیا کی دماغی بیماری میں مبتلا تھے جبکہ تیسرے گروپ کے 270 افراد بائی پولر دماغی بیماری میں مبتلا تھے۔ تحقیق کاروں کا کہنا ہے کہ ذہنی بیماری کے شکار افراد میں جنسی تعلق سے منتقل ہونیوالے انفیکشن کی شرح تقریباً 26 فیصد تھی جبکہ اس کے برعکس جن افراد میں ذہنی بیماری موجود نہیں تھی ان میں یہ انفیکشن 14 فیصد پایا گیا۔ سائنسدان ڈاکٹر ایملی سیورانس کا کہنا تھا کہ انفیکشن کی موجودگی قوت مدافعت کی کمی کی طرف اشارہ کرتی ہے اور قوت مدافعت میں کمی کا تعلق دیگر بیماریوں کی طرح ذہنی بیماری سے بھی ہوسکتا ہے۔ انکا مزید کہنا تھا کہ اس تحقیق کو ذہنی بیماری اور جنسی تعلق سے پھیلنے والے انفیکشن کے براہ راست تعلق کا ثبوت نہیں کہا جا سکتا، البتہ بالواسطہ طور پر اس تعلق کی موجودگی واضح نظر آتی ہے۔

متعلقہ خبریں