چین دس ہزار سال بعد حسن و جمال کی شہزادی

2016 ,دسمبر 10



بیجنگ (شفق ڈیسک) قدیم چینی لوک داستانوں کیمطابق قدرت ہر 10 ہزار سال بعد اپنی حسین ترین تخلیق کو دنیا میں بھیجتی ہے اور آجکے چینیوں کا کہنا ہے کہ وہ حسین ترین مخلوق اس بار چین میں جلوہ گر ہو گئی ہے۔ چینی لوگوں کیمطابق اس بار حسن و جمال کے اس بے مثال جلوے کا ظہور ملک کے شمال مشرق میں ایک نوعمر ماڈل کی صورت میں ہوا ہے۔ جو حال ہی میں ایک مقابلے میں پہلی بار سامنے آئی اور پھر سارے ملک پر یوں چھاگئی کہ اب ہر کوئی اس کا دیوانہ نظر آرہا ہے۔ اخبار دی مرر کی رپورٹ کیمطابق چین میں منعقد ہونیوالے ایلیٹ ماڈل لک مقابلے میں پہلی دفعہ نظر آنیوالی 16 سالہ لڑکی تانگ ہی پر نظر پڑتے ہی ناصرف عام لوگ اس کے حسن کے اسیر ہوگئے بلکہ شوبز کی دنیا سے تعلق رکھنیوالی بڑی بڑی شخصیات بھی اسے حسن و جمال کی شہزادی قرار دے رہی ہیں۔ تانگ ہی کا قد 5 فٹ 10 انچ ہے اور چینی میڈیا کیمطابق اسکا حسن کھلتے ہوئے پھول جیسا ہے جسے دیکھنے والے دیکھتے ہی رہ جاتے ہیں۔ تانگ ہی کی شہرت چین سے نکلتی ہوئی اب کوریا اور جاپان کیطرف بھی پھیل رہی ہیں۔ انکی حیرت انگیز مقبولیت کو دیکھتے ہوئے مغربی میڈیا بھی کہہ رہا ہے کہ عنقریب وہ ہالی ووڈ کی کامیاب ترین ماڈلز کیلئے ایک بڑا چیلنج بن چکی ہونگی۔ انٹرنیٹ پر تانگ ہی کے پرستاروں کی تعداد دیکھتے ہی دیکھتے لاکھوں میں جا پہنچی ہے اور ہر آنیوالے دن اس تعداد میں اضافہ ہوتا چلا جا رہا ہے۔

متعلقہ خبریں