اس نوجوان لڑکی نے اپنے سگے باپ کو ایسا شرمناک ترین کام کرتے رنگے ہاتھوں پکڑ لیا لیکن نتیجے میں اس کے ساتھ کیا ہوا جان کر آپ بھی دنگ رہ جائیں گے۔

2017 ,مئی 10



نئی دہلی(مانیٹرنگ ڈیسک) اوباشوں کی طرف سے لڑکیوں پر تیزاب پھینکنے کے واقعات تو پیش آتے رہتے ہیں لیکن گزشتہ روز بھارت میں ایک بدقماش باپ نے اپنی سگی بیٹی کے چہرے پر تیزاب پھینک دیا ہے۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق یہ واقعہ بھارتی ریاست اترپردیش میں پیش آیا جہاں 20سالہ خوشبو دیوی اپنے 4سالہ بیٹی اور شوہر کے ہمراہ اپنے گھر میں موجود تھی کہ اس کے والد مانک چندرا نے آ کر دروازے پر دستک دی۔ خوشبو نے درواز کھولا تو وہ اندر آ گیا۔ اس نے ہاتھ میں تیزاب کی بوتل اٹھا رکھی تھی۔ اندر آتے ہی اس نے خوشبو کے چہرے پر تیزاب پھینکا اور فرار ہو گیا۔ خوشبو کی بیٹی اور شوہر بھی تیزاب کی زد میں آ گئے لیکن زیادہ نقصان خوشبو ہی کو پہنچا جس کا آدھا چہرہ، سینہ اور بازوجل گئے۔ تینوں کو ہسپتال پہنچایا گیا۔ اب ان کی حالت بہتر بتائی جاتی ہے۔

رپورٹ کے مطابق خوشبو کا کہنا ہے کہ ’’میرا والدکئی سالوں سے لڑکیوں کی خریدوفروخت کر رہا ہے۔ وہ خوبصورت لڑکیاں خریدتا ہے اور پھر کئی گنا زیادہ قیمت پر آگے مردوں کو فروخت کر دیتا ہے۔ اس نے کئی شادیاں کیں اور پھر ان بیویوں کو بھی آگے فروخت کر دیا۔ میں اس کے تمام راز جانتی تھی چنانچہ وہ تیزاب پھینک کر مجھے قتل کرنا چاہتا تھا تاکہ اس کے راز باہر نہ آ سکیں۔میں چاہتی ہوں کہ وہ اب تمام عمر جیل میں گزارے کیونکہ انتہائی ظالم اور سفاک شخص ہے۔ میری ماں سریتا دیوی پر بھی اس نے بے حد مظالم کیے۔ وہ عمر بھر اس کے تشدد کا شکار رہی اور 2007ء میں چل بسی۔اس نے تمام عمر جو کچھ برداشت کیا وہ ناقابل بیان ہے۔ ایک بار میرے والد نے اسے اس قدر تشدد کا نشانہ بنایا کہ اس کے ایک کان کا پردہ پھٹ گیا اور وہ کان ناکارہ ہو گیا۔میری ماں کے ہوتے ہوئے اس نے 3لڑکیوں سے شادی کی اور پھر انہیں آگے فروخت کر دیا۔‘‘پولیس نے مقدمہ درج کرکے مانک چندرا کو گرفتار کر لیا ہے۔

 

متعلقہ خبریں