معروف اداکار انتقال کرگئے

2017 ,ستمبر 30



بھارت (مانیٹرنگ رپورٹ) بالی وڈ کی متعدد فلموں اوراسٹیج ڈراموں میں اداکاری کے جوہر دکھانے والے اداکار اور مصنف ٹام آلٹر ممبئی کے اسپتال میں 66 برس کی عمر میں انتقال کرگئے۔ 


وہ کافی عرصے سے جلد کے کینسرمیں مبتلا تھے۔  ٹام التر نے ستیہ جیت رے کی فلم ’’شطرنج کے کھلاڑی‘،’رام تیری گنگا میلی‘،’عاشقی‘ ،’کرانتی‘اور’پرندہ‘ جیسی سپرہٹ فلموں میں اپنی اداکاری کے منفرداسٹائل سے الگ پہچان بنانے والے تھامس بیچ آلٹربھارتی شہرمسوری میں 1950میں پیدا ہوئے تھے۔ ان کے دادا، دادی 1916ء میں امریکی شہر اوہائیو سے بھارتی شہرمدراس آئے اورپھر وہاں سے لاہورچلے گئے۔ ٹام کے والد پاکستان کے شہرسیالکوٹ میں پیدا ہوئے۔ تقسیم ہند کے بعد ٹام کے دادا، دادی تو پاکستان میں ہی مقیم رہے لیکن والدین بھارت چلے گئے تھے۔1976ء میں دھرمیندرکی فلم ’چرس‘ سے اپنے فلمی کرئیر کی شروعات کرنے والے ٹام آلٹرنے 300فلموں میں اپنی اداکاری کے جوہر دکھائے تھیئٹر میں انھوں نے اپنی پہچان قائم کی اور ان کا ڈراما 'لال قلعے کا آخری مشاعرہ' جس میں انھوں نے بہادرشاہ ظفر کا کردار ادا کیا، خاصا مشہور ہوا تھا علاوہ ازیں انھوں نے مولانا ابوالکلام آزاد پر مبنی ڈراما 'آزاد کا خواب' میں موالانا آزاد کا کردار ادا کیا تھا۔ ٹام الٹر کا اصلی نام ٹامس بیٹ آلٹر ہے۔

متعلقہ خبریں