ایک کروڑ 40 لاکھ پاکستانی مختلف نفسیاتی امراض میں مبتلا

2017 ,اپریل 22



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان میں 14 ملین شہری مختلف اقسام کے نفسیاتی امراض میں مبتلا ہیں۔ تفکرات‘ پریشانیاں ‘ ذہنی مریضوں کی تعداد بڑھا رہی ہیں۔ ذہنی مسائل میں مبتلا مریضوں کا علاج عطائی نہیں کر سکتے۔ اس علاج کیلئے باقاعدہ نفسیاتی امراض کے ماہرین ہی سب سے بہتر ذریعہ ہیں۔ مائنڈ آرگنائزیشن گزشتہ 25 برسوں سے ذہنی صحت کے فروغ میں مصروف عمل ہے اور پنجاب کے مختلف شہروں میں ذہنی امراض میں مبتلا مریضوں کو مفت علاج کی سہولتیں فراہم کر رہی ہے۔ ان خیالات کا اظہار مختلف مقررین نے مائنڈ آرگنائزیشن نے لاہور میں منعقدہ تقریب میں کیا۔ مائنڈ آرگنائزیشن کے صدر سعاد بی ملک نے تنظیم کے فلاحی کاموں کے حوالے سے شرکاء کو آگاہ کیا۔ ڈاکٹر قنبر بخاری‘ ڈاکٹر ارم زہرا بخاری‘ ڈاکٹر نبیل عباد سمیت دیگر شرکاء کی کثیر تعداد موجود تھی۔ اس موقع پر ایک ڈاکومنٹری بھی دکھائی گئی جس میں ذہنی امراض میں مبتلا مریض علاج کے بارے میں بتایا گیا۔ مائنڈ آرگنائزیشن کے صدر ڈاکٹر سعاد ملک کا کہنا تھا کہ یہ تنظیم گزشتہ 25 برسوں سے ذہنی امراض میں مبتلا مریضوں کا شکار ہوئے ہوں۔ وہ خواتین جو مار پیٹ کا شکار ہوئی ہوں اور مختلف ذہنی بیماریوں میں مبتلا مریضوں کی مدد فراہم کی جا رہی ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ پنجاب میں بورے والا‘ حافظ آباد‘ نارووال سمیت صوبے بھر میں ذہنی مریضوں کو طبی سہولتیں فراہم کی جا رہی ہیں۔ انہوں نے بتایا کہ مختلف کالجز میں طلباء و طالبات کو آگاہی کیلئے لیکچر بھی دیئے جاتے ہیں۔ مائنڈ آرگنائزیشن غیر منافع بخش‘ غیر سرکاری تنظیم ہے جو مختلف مخیر حضرات کی امداد سے ذہنی مریضوں کے علاج کیلئے عمل پیرا ہے۔

متعلقہ خبریں