نوجوان بانجھ لڑکی، ڈاکٹروں نے ماں کے جسم سے ایسی چیز نکال کر اس کے بدن میں لگادی کہ زندگی بدل گئی،

2017 ,مئی 23



نئی دلی (مانیٹرنگ ڈیسک)انسانی اعضاءکی پیوند کاری اگرچہ اب نا ممکنات میں سے نہیں رہا لیکن پھر بھی ایک خاتون کا رحم دوسری میں پیوند کرنے کا واقعہ یقینا نہایت حیرتناک واقعہ ہے۔ یہ انتہائی پیچیدہ اور حساس نوعیت کا آپریشن بھارت میں کیا گیا جہاں ایک 43 سالہ خاتون کا رحم اس کی 21 سالہ بانجھ بیٹی کے جسم میں ٹرانسپلانٹ کیا گیا ۔  نوجوان لڑکی نظام تولید کی خرابی کی وجہ سے ماں بننے کی صلاحیت سے محروم ہو چکی تھی ، جس پر اس کی والدہ نے اسے اولاد کا تحفہ دینے کیلئے اپنا رحم عطیہ کر دیا ۔ پونے شہر کے گلیکسی کیئر ہسپتال میں ڈاکٹر شالیش پنتانبکرکی سربراہی میں ایک ٹیم نے رحم کی پیوند کاری کا آپریشن کیا۔ یہ ایک مشکل اور طویل آپریشن تھا جو 9 گھنٹے میں مکمل ہوا۔ ڈاکڑ شالیش کا کہنا تھا کہ رحم کی پیوند کاری کا آپریشن کامیابی سے مکمل کیا گیا ہے تاہم لڑکی کو حاملہ ہونے کیلئے تقریباً ایک سال کا انتظار کرنا ہو گا، تاکہ ٹرانسپلانٹ کیا گیا رحم اس کے جسم کے ساتھ پوری طرح مطابقت اختیارکر لے۔ اور لڑکی ماں ببنے کء قابل ہو گئی۔۔۔ اور اس بات سے ماں بیٹی دونوں بہت خوش ہیں۔

متعلقہ خبریں