پاکستان کا پرچم سب سے اونچا لہرانا بھی ہمارے رقیب روسیاہ پڑوسی سے برداشت نہیں ہو رہا

2017 ,اگست 9



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): ابھی تو یہ جھنڈا صرف لہرایا ہے۔ اس کا لہرانا بھی ہمارے رقیب روسیاہ پڑوسی سے برداشت نہیں ہو رہا عجب بد فطرت پڑوسی ہمیں نصیب ہوا ہے۔ اس نے بھی اپنا ترنگا لہرایا تھا اپنی طرف سے بڑا اونچا کرکے مگر وہ کچھ ہی ماہ بعد موسم کے ستم ظریف ہاتھوں پھٹ کر اکھڑ گیا اور پیوندخاک ہوگیا۔ اس جھنڈے پر تو پاکستان نے کوئی شور نہیں مچایا۔ جاسوس جھنڈے کا الزام نہیں لگایا۔ اب واہگہ بارڈر پر پاکستان کی طرف سے 120 فٹ چوڑا اور 400 فٹ بلند پرچم جو 14اگست کو لہرایا جائے گا۔ جو دور دور سے دیکھنے والوں کو نظر آئے گا۔ اس پر بھارت والوں نے ابھی سے واویلا یہ مچایا ہے کہ یہ جھنڈا جاسوسی کے لئے استعمال ہوگا۔ ان کی بد حواسی دیکھیں کہتے ہیں اس جھنڈے سے پورے امرتسر پر نظر رکھی جائے گی کیوں کہ اسکے بلند پلیٹ فارم پر فوجی پہرہ دینگے یا شاید انڈیا والوں کو ہمارا پیارا چاند ستارہ آنکھ سے ملتا جلتا نظر آتا ہے اور انہیں لگتا ہے یہ آنکھ بھارتی پنجاب کی نگرانی کرے گی۔ اب بھارت کی ان اول فول باتوں پر ہنسی نہ آئے تو کیا رونا آئے۔ اب بھارتی جو چاہیں کہیں پاکستانی تو

چاند روشن چمکتا ستارہ رہے

سب سے اونچا یہ جھنڈا ہمارا رہے

پر ایمان رکھتے ہوئے اس یوم آزادی پر واہگہ بارڈ پر اس پرچم ستارہ وہلال کو سلامی دے کر اپنا سر فخر سے بلند کریں گے....۔

متعلقہ خبریں