لڑکیاں فروخت کرنے والی ہائپر مارکیٹ بند کردی گئی

2016 ,دسمبر 26



عریبین بزنس کی رپورٹ کے مطابق ہسعودی عرب کے شہر دہران کی ائپر مارکیٹ میں ہر قسم کی اشیاء فروخت ہو رہی تھیں، لیکن سب سے منفرد شے وہ لڑکیاں تھیں جو سفید لباس میں ملبوس ایک سٹال پر کھڑی تھیں جبکہ ان کے پاس ہی گاہکوں کے لئے ایک اشتہار آویزاں تھا جس پر ان لڑکیوں کی تمام تفصیلات فراہم کی گئی تھیں۔ گلف ڈیلی نیوز کا کہنا ہے کہ یہ لڑکیاں گھریلو ملازماﺅں کے طور پر پیش کی گئی تھیں اور گاہک دیگر اشیائے فروخت کی طرح انہیں بھی اچھی طرح دیکھ کر اور ان کے متعلق فراہم کی گئی معلومات جان کر انہیں لے جانے کا فیصلہ کرسکتے تھے۔ لڑکیوں کو برائے فروخت اشیاءکی طرح گاہکوں کے سامنے پیش کرنے کی خبر وزارت محنت کو ہوئی تو فوری طور پر ایک ٹیم ہائپر مارکیٹ پہنچ گئی۔ وزارت محنت کے ترجمان خالد ابا الخلیل کا کہنا تھا کہ وزارت کے انسپکٹروں نے فوری طور پر موقع پر پہنچ کر کارروائی کی۔ انہوں نے اس طرح کے واقعات کو ناقابل قبول قرار دیا۔ ان کا مزید کہنا تھا کہ اس واقعہ میں ملوث کمپنی کے خلاف قانونی کارروائی کی جارہی ہے اور اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ آئندہ اس طرح کا کوئی واقعہ رونما نہ ہو۔کہا جارہا ہے کہ لڑکیاں فروخت کرنے والی ہائپر مارکیٹ بند کردی گئی ہے۔.

متعلقہ خبریں