تین دوست اور ایک گنجا۔۔۔۔ایک ایسی تحریر جسے پڑھنے کے بعد آپ ہنس ہنس کے لوٹ پوٹ ہو جائیں گے

2019 ,اکتوبر 21



تین فوجی دوست سینما میں فلم دیکھنے گئے، وہاں کچھ کرسیاں چھوڑ کر اُنکے آگے ایک گنجا شخص آ کے بیٹھ گیا, فلم کے دوران ہی اِن تینوں فوجیوں کو شرارت سوجھی اور انہوں نے ایک دوسرے سے شرط لگائی کہ ہم میں سے جو بھی دوست اِس گنجے کے سر پر زور سے ہاتھ مارے گا اُسے پانچ سو روپے ملیں گے۔۔۔!!! آخر ایک فوجی تیار ہوگیا۔۔!! وہ اُس گنجے شخص کے پاس گیا اور زور سے اُس کے سر پر ہاتھ مارتے ہوئے بولا،

"او شیدے! کیا حال ہے تیرا۔۔؟"
گنجے شخص نے گھوم کر اُس کی طرف دیکھا اور غصے میں بولا،

"ھیلو! تمہیں غلط فہمی ہوئی ہے میں شیدا نہیں ہوں۔۔!"
۔"اوھووو! سوری"۔۔۔!! اتنا کہہ کر وہ واپس آ گیاکہ اگر اب کی بار تم اُس کے سر پر ہاتھ مارو گے تو ہزار روپے ملیں گے،
پہلے تو وہ تھوڑا سا ہچکچایا لیکن پھر راضی ہوگیا۔
اِس بار اُس نے گنجے کے سر پر ہاتھ مارتے ہوئے کہا،

"دیکھو یار! مذاق مت کرو، مجھے پتہ ہے تم شیدا ہی ہو۔۔۔!!!"
اِس بار تو وہ گنجا شخص غصے سے لال پیلا ہو گیا اور اپنی کرسی سے اُٹھتے ہوئے بولا، "
تمہیں ایک بار کہا کہ میں شیدا نہیں ہوں تو تمہیں سمجھ نہیں آتی۔۔!"۔
وہ دوست "سوری" کہہ کر پھر واپس اپنی سیٹ پر آگیا اور اُسے ہزار روپے مل گئے، اِس دوران وہ گنجا شخص غصے میں ہال سے اُٹھ کر اوپر باکس میں جا کر بیٹھ گیا۔ اِس بار پھر دونوں دوستوں نے اُسے کہا اگر اب کی بار تم اُسے مار کے آؤ تو تمہیں پندرہ سو روپے ملیں گے۔،
تھا تو بہت مشکل لیکن وہ پھر ہمت کر کے باکس میں جا پہنچا
وہاں اُس کے سر پر زور سے ہاتھ مارتے ہوئے بولا،
"اوے شیدے!
تم یہاں باکس میں بیٹھے ہوئے ہو میں نیچے ہال میں پتہ نہیں کس کو مارتا رہا ہو

متعلقہ خبریں