گورنر موسیٰ کا بیٹا اور پولیس کی فرمانبرداری۔ ایک ایسی کہانی جسے پڑھ کر آپ دنگ رہ جائیں گے

2020 ,مارچ 21



گورنر موسیٰ کا بیٹا ابراہیم موسیٰ اداکارہ حنا کی زلفِ گرہ گیر کا اسیر ہوکر شادی پر تُل گیا ۔ گورنر نے سختی سے منع کیا لیکن دونوں نے ڈھاکہ جا کر شادی کر لی ، کچھ دنوں بعد جوڑاواپس آگیا۔ایک شب سینما آگئے‘ شو ختم ہوا تو ایک اعلیٰ پولیس افسر ”استقبال“ کیلئے موجود تھے۔بتایاگیا ،گورنر صاحب نے طلب کیا ہے۔ ابراہیم نے جانے سے انکار کر دیا۔مگروہ ایس پی کے ہلکے سے ”اشارے“ پر دو درجن پولیس جیپوں کے قافلے میں گورنر ہاﺅس کی طرف رواں اور کچھ دیر بعد گورنر کے سامنے کھڑے تھے۔ گورنر نے غصے کا اظہار کیا تو بیٹے نے بدزبانی کی اور پسٹل نکال لیا۔ ساتھ کھڑے پولیس افسر نے پلک جھپکتے میں پستول چھین لیا۔ گورنر صاحب نے شدید غصے میں ناخلف کوگالی دی اور ایس پی سے کہا جاﺅ اس کی ٹانگیں توڑ کر جیل میں پھینک دو۔ تین چار گھنٹے بعد گورنر نے ایس پی سے پوچھا"ابراہیم کس جیل میں ہے"ایس پی نے کہا ”سر وس ہسپتال میں ہے، آپ نے کہا تھا اس کی ٹانگیں توڑ دو پولیس نے توڑ دی ہیں" ۔اُن دنوں میڈیکل کی سہولتیں بھی جدید نہیں تھیں۔ ابراہیم موسیٰ کی ٹانگوں کے زخم بگڑتے بگڑتے ناقابلِ علاج ہو گئے اور وہ اسی تکلیف میں چل بسا۔

متعلقہ خبریں