سیاستدانوں کے بعد جرنیل بھی ایکسپوز ہونگے؟اور پھر باری ہے عدلیہ کی

2022 ,اپریل 1



(مہرماہ رپورٹ) امریکہ کے کہنے پر عمران خان کے خلاف تحریک عدم اعتماد لا کر اپوزیشن پارٹیاں ایکسپوز ہو چکی ہیں۔ ایسا کرنا اگر غداری ہے تو عدم اعتماد لانے والے،اسے سپورٹ کرنے والے سب غدار ہیں۔ غداروں کے خلاف ایکشن کس نے لینا ہے۔ حکومت اور ریاست نے حکومت کے ہاتھ بندھے ہوئے ہیں ۔ ریاست یعنی فوج سے امید کی جا رہی ہے کہ وہ غداروں امریکہ کے وفاداروں کو انجام تک پہنچائے گی کل عدم اعتماد تک کوئی ایکشن نہیں ہوتا تو سمجھ لیا جائے کہ فوج کے ذمہ دار کچھ جرنیل بھی امریکہ کے دبائو میں آ گئے ہیں اور ایکسپوز ہو گئے ہیں ۔ ہماری سپریم کورٹ اور جسٹس ریٹائر افتخار محمد چوہدری کے زیر سایہ بروئے عمل اسلام آباد ہائیکورٹ بھی ساری صورت حال پر دم سادھے ہوئے ہے۔ سپیکر قومی اسمبلی ایسی صورت میں سازی تحریک کو ہو سکتا ہے ایک طرف پھینک دیں۔ روشن ضمیروں کے ووٹ کاونٹ نہ کریں۔ اس پر پھر معاملہ کورٹ جائے گا۔ وہاں کیا ایکشن ہوتا ہے۔ کورٹ پر بھی امریکہ نے کام کر رکھا ہے؟؟۔ یہ بھی سب سامنے آجائے گا۔ عمران خان کے خلاف فیصلہ آتا ہے تو کورٹ بھی ایکسپوز ہو جائے گی۔ عمران خان سر دست عوام کے ساتھ ہونے کے باوجود تنہا ہے سب مل کر اسے گرا رہے ہیں۔ کہتے ہیں عوام کا کردار الیکشن میں ہی سامنے آ سکتا ہے مگر عمران خان کی کال پر عوام غداری کے دروبام ہلا سکتے ہیں

متعلقہ خبریں