مقبوضہ کشمیر کی صورتحال سے متعلق بھارتی سپریم کورٹ کا موقف بھی سامنے آگیا جس پر وزیراعظم عمران خان نے کیا کہا؟  جانئے اس خبر میں

2019 ,ستمبر 16



اسلام آباد(مانیٹرنگ رپورٹ) بھارتی سپریم  کورٹ نے مقبوضہ کشمیرمیں بدترین صورتحال سے متعلق حکم جاری کرتے ہوئے کہا ہے کہ مقبوضہ کشمیر میں جلد حالات کو نارمل کیا جائے۔ بھارتی سپریم کورٹ کا موقف سامنے آنے پر وزیراعظم عمران خان بھی میدان میں آگئے، وزیراعظم کی زیرِ صدارت حکومتی رہنمائوں اور ترجمانوں کا اجلاس ہوا جس میں وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ بھارت مقبوضہ کشمیر میں حالات  نارمل ہونے سے متعلق جھوٹ بولتا رہا ہے جس پر بھارتی سپریم کورٹ کے فیصلے پر پاکستانی موقف کی تائید ہوئی۔
انہوں نے کہا کہ دنیا نے دیکھ لیا کہ بھارت کس حد تک مقبوضہ کشمیر میں حالات نارمل ہونے سے متعلق جھوٹ بولتا رہا۔ پاکستان کشمیریوں کی ہر فورم پر حمایت کرتا رہے گا، وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ 27 ستمبر کو میں خود کشمیر کا سفیر بن کر جنرل اسمبلی میں خطاب کروں گا۔ 
 واضح رہے کہ  بھارت نے 5 اگست کو مقبوضہ  کشمیر میں کرفیو نافذ کیا اور مواصلات کا نظام بند کردیا گیا ہے۔ جس پر آج بھارتی سپریم کورٹ کے چیف جسٹس نے حکم دیتے ہوئے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کے حالات کو جتنی جلدی ہوسکے نارمل کیا جائے اور اگر ضرورت پڑی تو وہ خود مقبوضہ کشمیر کا دورہ  کریں گے۔

متعلقہ خبریں