اگر میں 11 نومبر تک نہ لوٹ سکوں تو ۔۔۔۔۔ طیارہ حادثے میں جان بحق ہونیوالے نوجوان کی منگیتر نے ایسا کام کر ڈالا کہ سب کی آنکھیں نم ہو گئیں

2018 ,نومبر 17



جکارتہ(ویب ڈیسک) سمندر میں گر تے ساتھ ہی تباہ ہونے والے انڈونیشئن  طیارے کے حادثے میں ایک ایسا نوجوان بھی ہلاک ہوا جس کی 11 نومبر کو شادی تھی، لڑکی نے اپنے منگیتر کی آخری خواہش پوری کر کے سب کو آبدیدہ کرڈالا۔ معلومات کے مطابق انڈونیشیا میں 29 اکتوبر کو ہونے والے طیارہ حادثے میں

https://www.instagram.com/p/BqCUD4UnFq6/
ہلاک ہونے والے نوجوان نے سفر پر جانے سے قبل اپنی منگیتر سیاری سے مذاق میں ایک بات کر ڈالی جو حقیقت میں بدل گئی اور سچ ثابت ہوگئی ۔ منگیتر سیاری نے اپنے انٹرویومیں بتایا کہ پراتما 28 اکتوبر کو جکارتہ اپنے دفتری کام سے گئے تھے، گھر واپس آنے سے قبل ائیرپورٹ پر اُن سے میری مختصر گفتگو ہوئی جس میں پراتما نے مذاق میں کہا کہ اگر میں 11 نومبر تک نہ لوٹ سکوں تو جو جوڑا تمھارے لیے پسند کیا وہ پہن لینا اور تصویر بنوانا اور مجھے ضرور بھیج دینا‘۔ لڑکی سیاری نے بتایا کہ پراتما 29 اکتوبر کو  جکارتہ گئے اور پھر انہوں نے شادی کی چھٹیاں لے لیں تھیں، وہ واپس گھر شادی کی غرض سے ہی آرہے تھے مگر افسوسناک واقعہ پیش آگیا جس نے مجھے توڑ کر رکھ دیا‘۔ سیاری نے کہا کہ میں جس قدر غمزدہ ہوں مگر میں پراتما کی خواہش پوری کروں گی اور 11 نومبر کو وہی لباس زیب تن کر کے دلہن بن کر تصاویر بنوائوں گی۔ سیاری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ پر اپنی تصویر شیئر کرتے ہوئے جذباتی اسٹیٹس شیئر کیا جس میں لکھا کہ ’میں نے تمھاری طرح مضبوطی کا مظاہرہ کرتے ہوئے تمھارے ساتھ جا کر لینے والا شادی کا جوڑا اور انگھوٹھی پہن کر تمھاری آخری خواہش پوری کردی‘۔ یاد رہے کہ 29 اکتوبر کو جکارتہ ائیرپورٹ سے پرواز بھرنے والا نجی ایئرلائن کا طیارہ پندرہ منٹ بعد ہی جاوا کے سمندر میں گرا اور تباہ ہوگیا تھا جس میں موجود  تمام 189 افراد ہلاک ہوگئے تھے۔
 

متعلقہ خبریں