پی ٹی آئی میں کچھ لوگ وزیراعظم کو ہٹانے کیلئے تیار: خواجہ آصف

2019 ,مئی 27



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) مسلم لیگ ن کے سنیئر رہنماء خواجہ آصف نے کہا ہے کہ تحریک انصاف کے اندر کچھ لوگ وزیراعظم کو ہٹانا چاہتے ہیں، پارٹی کے اندر کے لوگ تیار بیٹھے ہیں، نام نہیں لیناچاہتا، سپیکر صاحب کو علم ہے جس پر سپیکر کامسکراتے ہوئے کہناتھا کہ ’مجھے کچھ معلوم نہیں، میں ان لوگوں کو نہیں جانتا ‘۔ سپیکر اسد قیصر کی زیرصدارت ہونیوالے قومی اسمبلی کے اجلاس  میں خطاب کرتے ہوئے خواجہ آصف کا کہنا تھا کہ موجودہ وزیرخزانہ مشرف دور اور پیپلزپارٹی دورمیں بھی رہاہے، کوئی نیا بندہ تولے آتے، پی ٹی آئی کووزیرخزانہ نہیں ملا ان کو لیز پر لینا پڑا ہے، کسی سیاسی کارکن کی اس سے زیادہ تذلیل نہیں ہوسکتی جس طرح سابق وزیر خزانہ کو رخصت کیا، سابق وزیرخزانہ بڑے تکبر اور رعونت کےساتھ ایوان میں بات کرتے تھے، آئی ایم ایف کے لوگ ہماری معیشت پر بیٹھ گئے ہیں، اسٹیٹ بینک اوروزارت خزانہ میں آئی ایم ایف کے لوگ بیٹھ گئےہیں، وزیرخزانہ بڑے تکبر کے ساتھ یہاں بات کرتےتھے ان کو اپنی ہی حکومت نے رخصت کردیا۔

خواجہ آصف نے کہا کہ ہماری معاشی آزادی پرسمجھوتا ہوچکا ہے، اس وقت جومعیشت کو چلا رہے ہیں ان کا کسی سیاسی جماعت سے تعلق نہیں، ہماری معاشی آزادی پرسمجھوتا ہوچکا ہے۔ اس موقع پر انہوں نے کہا کہ حکومت چیئرمین نیب کوبلیک میل کرنا چاہتی ہے، چیئرمین نیب کےمعاملے پرحکومت نےشرمناک کردار ادا کیا، اپوزیشن کی تمام جماعتیں نیب قوانین کی زد میں ہیں، آصف زرداری،اسپیکرسندھ اسمبلی سراج درانی نیب قوانین کی زد میں ہیں، آصف زرداری، اسپیکرسندھ اسمبلی سراج درانی نیب قوانین کی زد میں ہیں، حکومت نےچیئرمین نیب کوبلیک میل کرنے کا پلان بنایا، وزیراعظم کےخلاف بھی تحقیقات زیرالتواہیں ,حکومت نے اپنے لوگوں کوبچانے کے لیے نیب میں بعض ترامیم تجویز کیں، پیپلزپارٹی اورہمارے دورمیں نیب قوانین میں ترامیم نہیں کی گئی یہ ہماری ناکامی ہے، چیئرمین نیب کےمعاملے پر پارلیمنٹ کی خصوصی کمیٹی تشکیل دی جائے جو تحقیقات کرے ۔ 

متعلقہ خبریں