میڈم ایلس فیض کا خط

2022 ,جنوری 24



لاہور میں رہنا مہنگا ہوتا جا رہا ہے۔16روپے میں آٹا ہوگیا ہے اور ہم مشکل سے گزارا کر پا رہے ہیں۔ آخر یہ حکومت کر کیا رہی ہے؟ لوگ بھوک سے مر رہے ہیں۔ کل میں نے سولہ روپے کا ایک من آٹا خریدا۔ پچھلے سال مارچ میں جب تم گئے تھے تو من بھر آٹے کی یمت نو روپے تھی، (میں نے اپنی حساب کی پرانی ڈائری میں چیک کیا تھا)۔ چیزوں کی قیمتوں میں آگ لگی ہوئی ہے۔ ٹوتھ پیسٹ کی ایک ٹیوب تین روپے بارہ آنے کی، لکس صابن کا ایک پیکٹ چار روپے کا ہم نے گھر میں ٹوتھ پاؤڈر بنا لیا تھا جو دو مہینے چلا۔ آموں کا موسم ہے اور میرا دل اداس ہے، مجھے یاد آتا ہے جب تم دوپہر کو کھانے پر گھر آتے تو بڑے بڑے آموں سے بھرا ایک تھیلا تمہارے ہاتھ میں ہوتا اور کبھی بھولتے نہیں تھے۔ فیض کو ایلیس کے لکھے خط سے اقتباس

متعلقہ خبریں