برطانوی وزیراعظم بورس جانسن پر بجلیاں گر پڑیں

2019 ,اکتوبر 19



لاہور (مانیٹرنگ رپورٹ) برطانوی دارالعوام میں وزیر اعظم بورس جانسن کو ہفتہ انیس اکتوبر کی شام ایک اور خفت کا سامنا کرنا پڑا۔ بریگزٹ ڈیل برطانوی وزیراعظم بورس جانسن کے لیے بھی درد سر بن گئی، یورپی یونین کیساتھ ڈیل کرنے والے برطانوی وزیراعظم کو ایک بار پھر دھچکا لگ گیا، برطانوی پارلیمنٹ نے یورپی یونین کیساتھ معاہدے کو ملتوی کرنے کے حق میں ووٹ دیدیا۔ بریگزٹ کے حق میں 322 اور مخالفت میں 306 ووٹ پڑے۔


برطانوی حکومت کو پارلیمان میں شکست کے بعد بریگزٹ اب مزید تاخیر کا شکار ہو گیا ہے۔ اس موقع پر برطانوی وزیراعظم بورس جانسن نے پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بریگزٹ میں تاخیر پر اب یورپی یونین سے مزید کوئی بات نہیں ہوگی، کوئی قانون مجھے اس کام پر مجبورنہیں کرسکتا۔ یورپی یونین نے برطانیہ پر بریگزٹ کے حوالے سے اگلا لائحہ عمل جلد پیش کرنے پرزور دیا ہے جبکہ فرانس کا کہنا ہے کہ نئی بریگزٹ ڈیل میں تاخیر کسی کے لیے بہترنہیں ہے۔

متعلقہ خبریں