نانی خود اپنے پوتے یا پوتی کو اس دنیا میں لانے کی خواہشمند

2016 ,دسمبر 30



لندن (شفق ڈیسک) برطانوی خاتون کے اپنی بیٹی کے بچے کو اپنے بطن سے جنم دینے کی خبروں نے تہلکہ مچادیا۔ بچہ جنم دینے کیلئے قانونی لڑائی لڑنے والی 59 سالہ خاتون اور اس کا شوہرنے موقف اپنایا کیا کہ ان کی مرحوم بیٹی کی یہ آخری خواہش تھی کہ اس کا انڈہ لے کر کسی اور سپرم کا استعمال کرتے ہوئے اسے اس کی ماں کے پیٹ میں رکھا جائے تا کہ اس کا بچہ بھی اس دنیا میں آسکے لیکن اس کے اس اعلان پر برطانیہ میں ایک ہنگامہ کھڑا ہوگیا۔ مرحومہ لڑکی بچہ پیداکرنے کی خواہاں خاتون کی اکلوتی اولاد تھی اور چار سال قبل آنتوں کے کینسر کی وجہ سے جوانی میں ہی فوت ہوگئی تھی۔اپنی بیماری کے دوران ہی اس نے اپنا انڈہ یہ سوچتے ہوئے محفوظ رکھوا دیا تھا کہ صحت مند ہوکر وہ بچے کو جنم دے گی لیکن اس کی موت واقع ہوگئی لیکن اس کی ماں نے اس انڈے کے ذریعے اپنا نواسہ یا نواسی پیدا کرنے کا بیڑا اٹھا لیا لیکن برطانوی قانون اس بات کی اجازت نہیں دیتا جس پر خاتون نے انڈہ کی حوالگی کی درخواست کردی۔ طبی ماہرین کا کہنا ہے کہ ماں بننے کی شوقین60سالہ خاتون اور بچے کو کئی طرح کی پیچیدگیوں کاسامنا کرنا پڑ سکتا ہے لیکن خاتون اپنی بیٹی کی آخری خواہش پوری کرنے پر بضد ہے۔

متعلقہ خبریں