چاروں چراغ تیرے بلن ہمیشہ........پنجواں میں بالن آئی آں

2019 ,اکتوبر 28



میلا اپنے عروج پر تھا ڈھول کی تھاپ پر ملنگ اپنی اپنی مستی میں مگن دھمال ڈال رہے تھے کچھ لوگ مزار پر حاضری دے رہے تھے کچھ لنگر کرنے میں مصروف تھے کچھ لنگر کروانے میں مصروف تھے اور کچھ بیٹھے ہوئے اس بات کا انتطار کر رہے تھے کہ ڈھول کی ڈم ڈم بند ہو تو وہ اپنی بات چیت کر سکیں بچے ڈھول کے گرد گھیرا جمائے دھمال دیکھ رہے تھے ملنگ پورے جوبن میں دھمال ڈال رہے ہیں کہ ایک طرف سے زور دار آواز آئی بولو بولو بولو سخی لال قلندر مست اور سب نے اس کا جوابی نعرہ مارا اور ڈھول کی آخری زور دار تھاپ بجی ہر طرف خاموشی چھاہ گئی کئی لوگوں نے شور بند ہونے پر شکر ادا کیا اور کئی لوگوں نے ڈھول والوں سے مزید فرمائش کی مگر ڈھول والوں کی مہربانی کے انہوں نے رکنا مناسب سمجھا ڈھول کی تھاپ بند ہوئی تو میلے پر ایک طرف بیٹھے گروہ میں بات چیت کا آغاز ہوا ایک شخص نے پوچھا کہ بابا جی یہ جو دھمال ہے دما دم مست قلندر اس میں ایک شعر آتاہے
چاروں چراغ تیرے بلن ہمیشہ
پنجواں میں بالن آئی آ
ترجمہ
یعنی چار چراغ تو ہمیشہ سے جل رہے ہیں
پانچواں چراغ میں جلانے آئی ہوں
اس کا کیا مطلب ہے ؟ بابا جان فرماتے ہیں ہاں تو ٹھیک کہتا ہے چار چراغ تو پہلے سے ہی جل رہے ہیں چاہے آگ پانی مٹی ہوا کی صورت میں ہوں یا کائنات کی صورت میں تمہارے اردرگرد روشنی جو چاروں طرف ہے یہ تم سے پہلے کی ہے علم و حکمت سائنس و دریافت ہر طرح سے ہر طرف سے روشن جہان ہے جو تم سوچ سکتے ہو وہ تم لے سکتے ہو
تو اس لئے چار چراغ توروشن ہیں پانچواں چراغ یہ اپنا روشن کرئے گا اپنے دئیے کو روشن کرے گا اپنی خودی کو اجاگر کرے گا اپنی ذات کا اندھیرا ختم کرئے گا تو یہ پانچواں چراغ یہ خود اپنا روشن کرنے آیا ہے س لئے وہ ٹھیک کہتی ہے

متعلقہ خبریں