اور اب یکم جنوری کو لانگ مارچ کا اعلان ہو گیا، تفصیلات اس خبر میں

تحریر: فضل حسین اعوان

| شائع دسمبر 29, 2016 | 06:09 صبح

کراچی (ویب ڈیسک) جماعت اسلامی کراچی کے امیر حافظ نعیم الرحمن نے اتوار یکم جنوی کو شاہراہ قائدین پرشام اور برما میں مسلمانوں پر ڈھائے جانے والے مظالم اور مظلوم مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کے لیے ہونے والے امت رسولؐ مارچ کے سلسلے میں جامعہ دارالعلوم الاسلامیہ بنوری ٹاؤن کے مہتمم ڈاکٹرمولانا عبد الرزاق اسکندر ، دارالعلوم نعیمیہ کے مہتمم و رویت ہلال کمیٹی کے چیئر مین مفتی منیب الرحمن اور جامعہ بنوریہ العالمیہ سائٹ کے مہتمم مفتی محمد نعیم سے ان کے مدارس میں ملاقات کی اور انہیں مارچ میں شرکت کی دعوت د

ی ۔

علمائے کرام نے امت رسولﷺ مارچ کو وقت کی اولین ضرورت قراردیتے ہوئے اس کی بھرپور حمایت کی ۔ اس موقع پر جماعت اسلامی کراچی کے نائب امیر برجیس احمد، جمعیت اتحادالعلماء کے مولانا عبد الوحید ، ضلعی امراء یونس بارائی ، عبد الرزاق ، سیکریٹری اطلاعات زاہد عسکری ،ڈائریکٹر پبلک ریلیشنز عنایت اللہ اسماعیل اور دیگر بھی موجود تھے ۔ڈاکٹر عبد الرزاق اسکندر نے کہا کہ مسلمان ایک جسدِ واحد کی حیثیت رکھتے ہیں اگر جسم کے کسی حصے میں درد ہو گا تو پورا جسم مفلوج ہو جاتا ہے ۔حضورؐ کی حدیث کے مصداق آج شام و برما کے مسلمانوں پر ظلم و ستم پر سب مسلمانوں کو اس کا درد محسوس کر نا چاہیئے ۔مفتی منیب الرحمن نے کہا کہ مغربی ممالک دوہرے معیار کا ثبوت دے رہے ہیں ، وزیر اعظم پاکستان اور ترکی کے صدر کو اس مسئلے پر اپنا کردار اداکرنا چاہیئے ۔ او آئی سی اپنی خاموشی توڑے اور اپنا کردار ادا کرے ۔ مفتی نعیم نے کہا کہ ہم شام کے دس ہزار بچوں کی تعلیم و تربیت اور کفالت کی ذمہ داری لینے کا اعلان کرتے ہیں