موت کے گھاٹ اتر جانے والی خاتون کا 17 ماہ کا بچہ اس کے پاس بیٹھا کیا کر رہا تھا؟ حقیقت جان کر آپ کا دل خون کے آنسو روئے گا

2017 ,مئی 26



نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک) ماں کا رشتہ بہت ہی پیارا ہوتا ہے جو بچوں کیلئے اس بے درد دنیا میں ایک سایہ دار درخت کا کام کرتی ہے اور اپنے بچوں کی خوشی اور آرام کیلئے اپنا سکون غارت کر دیتی ہے۔بچپن میں جب کسی کی ماں اس دنیا سے رخصت ہو جائے تو بچے کو اس کا احساس نہیں ہوتا، ایسا ہی ایک واقعہ بھارت میں بھی پیش آیا جہاں ایک عورت اپنی جان سے ہاتھ دھو بیٹھی مگر اس کا 17 ماہ کا بچہ اس سے قطع نظر دودھ پینے کی کوشش کرتا رہا۔ دیکھنے والوں نے جب یہ منظر دیکھا تو اپنے آنسوﺅں پر قابو نہ رکھ سکے اور جب یہ ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل ہوئی تو ہر کسی کی آنکھیں اشکبار ہو گئیں۔بھارتی خبر رساں ادارے کے مطابق ایک 17 ماہ کا بچہ اپنی مردہ ماں کے پاس بیٹھا شدت سے دودھ پینے کی کوشش کرتا رہا جسے یہ معلوم ہی نہ تھا کہ اسے سب سے زیادہ پیار کرنے والی ’ماں‘ اب اس دنیا میں نہیں رہی۔ یہ واقعہ ریاست مدھیا پردیش کے دامو ڈسٹرکٹ میں پیش آیا جہاں چند راہگیروں نے خاتون کو ریلوے لائن کے قریب پڑے دیکھا تو فوراً پولیس کو اطلاع کر دی لیکن جب وہ پاس گئے تو دیکھا کہ اس کا بچہ بھی پاس موجود ہے۔ 
واقعے کے ایک عینی شاہد ”مونو بالمیکی “ کا کہنا تھا کہ ”ہم نے ریلوے کی لائنوں کے قریب ایک عورت کو پڑے ہوئے دیکھا تو پولیس کو اطلاع دی۔ لیکن جب ہم قریب گئے تو وہاں اس کے بیٹے کو بھی دیکھا جو رو رہا تھا اور اپنی ماں کا دودھ پی رہا تھا۔ یہ دیکھ کر ہماری آنکھوں میں آنسو آ گئے۔“اس نے مزید کہا کہ بچہ بھوکا تھا اور اپنی ماں کیلئے رو رہا تھا۔ جب اسے اپنی ماں کی طرف سے کوئی ردعمل نہ ملا تو اس نے خود ہی دودھ پینے کی کوشش شروع کر دی۔ پولیس نے عورت کی لاش کو پوسٹ مارٹم کیلئے ہسپتال منتقل کر دیا ہے جبکہ بچے کو مقامی چائلڈ ویلفیئر کمیٹی کے سپرد کر دیا گیا ہے۔ پولیس کا کہنا ہے کہ بچے کے جسم پر زخموں کے کوئی نشانات نہیں ہیں اور اس کے خاندان کا پتہ چلنے تک اسے یتیم خانے میں بھیج دیا گیا ہے۔

متعلقہ خبریں