بجٹ میں میک اپ کے سامان پر ٹیکس بڑھایا جائیگا

2017 ,مئی 24



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک): نئے بجٹ کی آمد سے قبل ہی بجٹ میں میک اپ کا سامان مہنگا کرنے کی اس خبر نے ملک کی آدھی سے زیادہ آبادی کو پریشانی میں مبتلا کر دیا۔ پہلے ہی اس آدھی سے زیادہ آبادی کی اکثریت صرف میک اپ سے ہی خوش ہوتی ہے۔ انہیں اور کوئی خوشی کے مواقع کہاں ملتے ہیں۔ دن ہو یا رات کام کام اور صرف کام کا مقولہ ان کےلئے ہی بنا ہے۔ اب لے دیکر ایک دوسرے کے گھر ملنے ملانے یا دیگر تقریبات میں اگر یہ آدھی آبادی ذرا بن سنور کر سج دھج کر نکلتی ہے تو اس سے حکومت کا کیا جاتا ہے۔ دکانداروں اور تاجروں کا تھوڑا بہت خرچہ پانی بھی انہی کی خریداری سے نکلتا ہے۔ ویسے بھی ہماری خواتین کو اور کچھ ملے نہ ملے بس کسی بھی تقریب میں آتے جاتے وقت میک اپ کا موقع اور سامان میسر ہو تو انکے سارے گلے شکوے دور ہو جاتے ہیں۔ اب حکومت نے الیکشن سے قبل کے بجٹ میں اسی آدھی آبادی کی ناراضگی اگر مول لی تو اس کا خمیازہ بھی آنےوالے الیکشن میں بھگتنا ہو گا اس لئے وزیر خزانہ آدھی آبادی کی بددعائیں نہ لیں جو پہلے ہی میک اپ مہنگا ہونے کا رونا رو رہی ہے۔ ویسے بھی اب تو میک اپ کے معاملے میں مردوں نے بھی کوئی کسر نہیں چھوڑ رکھی‘ وہ بھی بن سنور کر نکلتے ہیں۔ شادی بیاہ ہو یا کوئی اور تقریب اب تو یہ مردان نوخیز ہوں پختہ عمر رسیدہ سب شعلہ طور بننے کی کوشش میں بیوٹی پارلرز یا دولہا سنگھار ہاﺅسز کے گرد منڈلاتے نظر آتے ہیں اس لئے اب یہ میک اپ صرف عورتوں کا ہی نہیں مردوں کا بھی من بھاتا فیشن بن گیا ہے۔ اتنے زیادہ لوگوں کو ناراض کرنا دانشمندی نہیں ہو گی۔

متعلقہ خبریں