گوجرہ ۔شادی کرنا نوجوان کا جرم بن گیا۔ لڑکی کے گھر والوں کا لڑکے پر ایسا ظلم کہ آپ بھی توبہ کر اٹھیں

2020 ,مارچ 31



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک):  گوجرہ نواحی گاؤں میں ظلم کی انتہا ہو گئی۔ گوجرہ نعمان شاہد لڑکے نے 20 روز قبل  ثنا نامی لڑکی سے شادی کی تھی۔ لڑکی کے پھوپھی زاد بھائیوں رضوان اور شاہد نے کلہاڑی کے وار سے لڑکے کے بازو اور ٹانگیں کاٹ دیں۔ نوجوان کو کلہاڑیوں کے وار سے مارنے کی فوٹیج سوشل میڈیا پر اپ لوڈ کی گئی۔ فوٹیج میں دو ملزمان کو لڑکے کے بازو اور ٹانگیں کاٹتے دیکھا جا سکتا ہے۔ اور ساتھ ہی ساتھ ملزمان کی للکار اور نوجوان کی چیخ و پکار بھی واضح طور پر سنی جا سکتی ہے۔ مدد کے لیے آنے والے افراد کو بھی ملزمان کی طرف سے دھمکی دی گئی۔

متاثرہ نوجوان کو بے یارومددگار چھوڑ کر جب ملزمان فرار ہو گئے تو لوگو نے اسے اسپتال پہنچایا۔ نوجوان کو مخدوش حالت میں الائیڈ اسپتال ریفر کردیا گیا۔ متاثرہ نوجوان کو اسپتال وینٹی لیٹر لگا کر رکھا گیا ہے۔ ملزمان موقع سے فرار ہو گئے۔ گوجرہ کی عوام نے وزیر اعلی پنجاب سے درخواست کی ہے کہ وہ اس واقع کا نوٹس لیں۔

متعلقہ خبریں