کم عمر باپ بننے والے مردوں کے بارے میں سائنسدانوں نے انتہائی تشویشناک انکشاف کردیا، ایسی عمر بتادی کہ کروڑوں مردوں کو بے حد پریشان کردیا

2017 ,مئی 2



نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) والدین کی عمر اور ان کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں کی صحت کے مابین تعلق پر کئی تحقیقات ہو چکی ہیں۔ اب ایک نئی تحقیق میں سائنسدانوں نے اس حوالے سے ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ جان کر مرد پریشان ہو جائیں گے۔ سائنسدانوں نے بتایا ہے کہ ”25سال سے کم اور 51سال سے زیادہ عمر کے مردوں کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں میں پیدائشی ذہنی معذوری کے امکانات زیادہ ہوتے ہیں۔ نیویارک کے ادارے ماﺅنٹ سینائی کے سائنسدانوں نے اس تحقیق میں4سے 16سال کے 15ہزار بچوں پر تجربات کیے ہیں جن میں معلوم ہوا ہے کہ جن بچوں کے والد25سال سے کم اور 51سال سے زائد عمر کے تھے ان کے خودفکری کی بیماری میں مبتلا ہونے کے امکانات دوسروں کی نسبت بہت زیادہ تھے۔ تحقیقاتی ٹیم کی رکن ڈاکٹر جنیکا کا کہنا تھا کہ ”اس عمر کے مردوں کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں کی ذہنی صلاحیت متاثر ہوتی ہے، وہ بہتر گفتگو بھی نہیں کر سکتے، ان میں سیکھنے کی صلاحیت کا بھی فقدان ہوتا ہے اور وہ خودفکری کی بیماری میں مبتلا ہوتے ہیں۔ تحقیق میں معلوم ہوا ہے کہ ماں کی عمر اس حوالے سے بچوں کی صحت پر اثرانداز نہیں ہوتی۔“ اور یہی بات مردوں کے لیے تشویش کا باعث بنی ہوئی ہے۔

متعلقہ خبریں