مرد ٹیچر کے ساتھ 4 خواتین کی اجتماعی زیادتی، اور پھر اس کی ایسی چیز چُرا کر فرار ہوگئیں کہ جان کر آپ بھی شرم سے پانی پانی ہو جائیں گے۔

2017 ,مارچ 1



زمبابوے(مانیٹرنگ ڈیسک)خواتین سے زیادتی کی خبریں تو آپ سنتے آئے ہیں لیکن آپ یہ جان کر حیران ہوں گے کہ گزشتہ دنوں زمبابوے میں 4خواتین نے ایک مرد ٹیچر کو اغواءکر لیا اور اس کے ساتھ اجتماعی زیادتی کر ڈالی۔ میل آن لائن کی رپورٹ کے مطابق ان خواتین نے ٹیچر کو گاڑی میں لفٹ دی اور اسے اغواءکر لیا۔ گاڑی میں ہی انہوں نے اسے نشہ آور دوا پلائی اورنیم بے ہوشی کی حالت میں اس کے ساتھ زیادتی کرتی رہیں۔رپورٹ کے ٹیچر کی عمر 28سال کے لگ بھگ تھی۔ خواتین نے اسے زیادتی کے بعد برہنہ حالت میں ویران علاقے میں جھاڑیوں میں پھینک دیا اور فرار ہو گئیں۔ٹیچر نے پولیس کو بتایا ہے کہ ”خواتین نے گاڑی میں بیٹھنے کے بعد زبردستی مجھے کوئی چیز پلا دی جس سے مجھ پر غنودگی چھا گئی اور وہ مجھ سے زیادتی کرتی رہیں۔ اس دوران انہوں نے میرے سپرمز چوری کیے اور اپنے ساتھ لے گئیں۔“ رپورٹ کے مطابق زمباوے میں اس سے قبل بھی خواتین کے مردوں پر جنسی حملوں اور ان کے سپرمز چوری کرنے کی وارداتیں منظرعام پر آ چکی ہیں۔ کچھ عرصہ قبل پولیس نے ایسی ہی 3خواتین ملزموں کو گرفتار کیا تھا جن کے قبضے سے سپرمز کی کافی مقدار بھی برآمد ہوئی تھی۔جس پر پولیس نے سب کچھ حراست میں لے لیا تھا۔اور ان کے خلاف مقدمہ درج کیا تھا۔

متعلقہ خبریں