ہمارے ملک میں کوئی بھی حقیقی لیڈر کہلانے کا حق دار نہیں

2022 ,جنوری 13



میاں شہبازشریف کا کہنا ہے کہ سانحہ مری میں 23 افراد کی موت کی سو فیصد ذمہ دار حکومت ہے۔ قوم اس قتل ِ عام کو معاف نہیں کر سکتی۔ پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو نے بھی سانحہ مری کے حوالے سے حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا کہ وزیراعظم سیاست سے پہلے انسانیت سیکھیں۔ ان دونوں صاحبان سے اتفاق کیا جا سکتا ہے لیکن ایک سوال ہے‘ کیا میاں صاحب بتانا پسند کرینگے کہ سانحہ ¿ ماڈل ٹاﺅن کا ذمہ دار کون ہے‘ جنہیں گولیوں کا نشانہ بنایا گیا تھا۔ کیا اس قتل ِ عام پر قوم انہیں معاف کردیگی۔ بلاول صاحب انسانیت سیکھنے کی بات کرتے ہیں‘ انہیں تھر میں بھوک سے دم توڑتے بچے نظر نہیں آتے‘ یہاں انکی انسانیت کہاں چلی گئی۔ خدارا! قوم کو بے وقوف بنانا بند کریں‘ اپنے گریبانوں میں جھانکیں۔ 23 بے قصور افراد انتظامیہ کی غفلت اور مافیاز کی ہٹ دھرمی کی نذر ہوگئے اور آپ لوگ پوائنٹ سکورنگ کی سیاست کرہے ہیں۔ ہمارے ملک میں کوئی بھی حقیقی لیڈر کہلانے کا حق دار نہیں۔ تحریر ڈاکٹر سلیم اختر

متعلقہ خبریں