اسمبلی سے مستعفی ہو کر اب میں ۔۔۔۔‘‘ اسد عمر جلد کیا کرنے والے ہیں؟ خود ہی ایسا اعلان کر دیا کہ انکے بھائی زبیر عمر بھی خوشی سے نہال ہوگئے

2019 ,اپریل 19



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) سابق وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے اسمبلی رکنیت سے مستعفی ہونے اور سیاست کو خیرباد کہنے پر غور شروع کردیا ہے۔نجی ٹی وی ہم نیوز نے ذرائع کے حوالے سے دعویٰ کیا ہے کہ سابق وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر پارٹی کی اندرونی سیاست سے دلبرداشتہ ہیں۔ انہوں نے اپنے قریبی دوستوں سے بات چیت میں سیاست چھوڑنے کی خواہش کا اظہار کیا ’ چاہتوں کہ اسمبلی رکنیت سے استعفیٰ دے دوں میری فیملی بھی سیاست سے نالاں ہے زیادہ وقت کراچی میں گزاروں گا‘۔قریبی ساتھیوں نے اسد عمر کو اسمبلی رکنیت نہ چھوڑنے کا مشورہ دیا۔ دوسری جانب وزیراعظم عمران خان اور اسد عمر کے درمیان واٹس ایپ پر رابطہ ہوا ہے۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے اسد عمر کا استعفیٰ منظور ہونے سے قبل آج پھر وزیراعظم عمران خان اور اسد عمر کے درمیان رابطہ ہوا۔وزیراعظم عمران خان نے ایک بار پھر اسد عمر کو اپنی مرضی کی دوسری وزارت لینے کی پیشکش کی۔سابق وزیر خزانہ اسد عمر نے جواب دیا کہ میں کچھ عرصہ تک کوئی وزارت نہیں لینا چاہتا۔ذرائع کا کہنا ہے کہ عمران خان ابھی اسد عمر کو اپنی ٹیم کا حصہ رکھنا چاہتے ہیں۔خیال رہے صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوینے اسد عمر کا استعفیٰ منظور کر لیا۔میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ صدر مملکت نے وزیراعظمعمران خان کی ایڈوائس پر وزیر خزانہ اسد عمر کا استعفیٰ منظور کر لیا ہے۔جس کا جوائنٹ سیکرٹری برائے کابینہ ڈویژن نے نوٹیفیکشن جاری کر دیا۔عجب کہ عبد الحفیظ شیخ کی بطور مشیر خزانہ تقرری کا نوٹیفیکشن بھی جاری کر دیا گیا ہے۔ خیال رہے وزیراعظم عمران خان نے گذشتہ روز تعینات کیا تھا۔جب کہ دوسری جانب کابینہ کے ارکان اسد عمر سے وزارت چھوڑنے کے معاملے پر غور کرنے کا مطالبہ کر رہے ہیں۔ وزیراعظم عمران خان کے معاون خصوصی زلفی بخاری نے اسد عمر سے دوبارہ کابینہ کا حصہ وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر کا استعفیٰ منظور کرتے ہوئے ڈاکٹر عبدالحفیظ شیخ کو مشیر خزانہ بننے کی خواہش کا اظہار کر دیا۔زلفی بخاری نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر ٹویٹ کرتے ہوئے کہا ہے کہ اسدعمر اپنے فیصلے پر نظر ثانی کریں،تحریک انصاف اور پاکستان کی اسد عمرسے امیدیں وابستہ ہیں۔ملک کو اسد عمر کی کابینہ میں موجودگی کی اشد ضرورت ہے۔یاد رہے گذشتہ روز وفاقی وزیر خزانہ اسد عمر نے سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر وزارت چھوڑنے کا اعلان کرتے ہوئے کہا تھا وزیر اعظم کی خواہش ہے کہ میں وزرارت خزانہ چھوڑ کر توانائی کی وزارت لے لوں، میں نے وزیر اعظم کو اعتماد میں لیا کہ میں کابینہ کا مزید حصہ نہیں رہوں گا. بعد ازاں ایک انٹرویو میں اسد عمر نے کہا تھا ان کے وزارت چھوڑنے سے ملک کی معیشت بہتر ہوتی ہے تو پھر یہ بہترین فیصلہ ہے میں نہ تو مایوس ہوں نہ ہی غصے میں، استعفے کی خبر خود دینا چاہتا تھا.

متعلقہ خبریں