نیب کی حراست میں موجود علیم خان نے عَلمِ بغاوت بلند کردیا ، وزیر اعظم عمران خان سے ایسا سوال پوچھ لیا کہ پور ی تحریک انصاف ہکا بکا رہ گئی

2019 ,مارچ 28



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) علیم خان نے اپنی جماعت کے فیصلوں کیخلاف بغاوت کردی، گزشتہ حکومت میں وزیر رہنے والوں کو موجودہ حکومت میں بھی وزیر بنانے پر اعتراض اٹھا دیا۔ تفصیلات کے مطابق پاکستان تحریک انصاف کے سینئر رہنما اور سابق صوبائی وزیر علیم خان نیب کی جانب سے گرفتار کیے جانے کے بعد اپنی جماعت کے رویے پر مایوسی کا اظہار کیا گیا ہے۔نیب کی قید میں موجود رکن پنجاب اسمبلی علیم خان کا کہنا ہے کہ وہ ہمیشہ سے وزیراعظم عمران خان کے وفادار رہے ہیں، انہیں امید ہے کہ عمران خان بھی ان پر بھروسہ کرتے ہیں۔ تاہم علیم خان نے اپنی ہی جماعت تحریک انصاف کے کچھ رہنماوں خاص کر وزراء پر تنقید کی ہے۔ علیم خان نے اپنی جماعت اور حکومت سے سوال کیا ہے کہ جو لوگ مسلم لیگ ن کی سابقہ حکومت میں وزیر تھے، وہ موجودہ حکومت میں بھی وزیر کیسے بن گئے۔علیم خان نے اپنی جماعت کی قیادت پر نظریاتی کارکنوں اور رہنماوں کو ترجیح دینے کی اپیل کی ہے۔ واضح رہے کہ سابق صوبائی وزیر اور رکن پنجاب اسمبلی علیم خان کو کچھ عرصہ قبل نیب نے ناجائز اثاثے بنانے کے الزام میں گرفتار کر لیا تھا۔ نیب کی جانب سے علیم خان کیخلاف تحقیقات کیے جانے کا سلسلہ جاری ہے۔ جبکہ اس دوران علیم خان نیب کی حراست میں ہی موجود ہیں۔تاہم علیم خان پنجاب اسمبلی کے اجلاسوں میں بھی باقاعدگی سے شرکت کر رہے ہیں۔ علیم خان کو پنجاب اسمبلی کے اجلاس میں شرکت کروانے کیلئے اسپیکر پنجاب اسمبلی پرویز الہیٰ کی جانب سے پروڈکشن آرڈر جاری کیے جاتے ہیں۔ جبکہ نیب کی حراست میں موجود علیم خان خود پر لگائے جانے والے الزامات کی مسلسل تردید بھی کر رہے ہیں۔ علیم خان کا کہنا ہے کہ ان پر لگائے جانے والے الزامات غلط ہیں، انہیں امید ہے کہ وہ جلد بے گناہ قرار دے دیے جائیں گے۔

متعلقہ خبریں