سانحہ نیوزی کے بعد سب کے دلوں میں گھر کر جانے والی جیسنڈا آرڈرن نے شاندار اعزاز حاصل کرلیا ۔۔ پوری دنیا تعریفوں پر مجبور

2019 ,اپریل 4



ولنگٹن(مانیٹرنگ ڈیسک) گزشتہ ماہ 15 مارچ کو نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ میں مساجد پر ہونے والے دہشت گرد حملے میں 50 نمازیوں کی شہادت کے بعد مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کرنے والی جیسنڈا آرڈرن کی شہرت میں دن بہ دن اضافہ دیکھنے میں آ رہا ہے۔پہلے انہیں مسلمانوں سے اظہار یکجہتی کے دوران حجاب اوڑھنے کی وجہ سے دنیا بھر میں شہرت حاصل ہوئی اب ان کی جانب سے ایک خاتون کا بل ادا کرنے پر ان کی تعریفیں کی جا رہی ہیں۔جیسنڈا آرڈرن نے گزشتہ ہفتے نیوزی لینڈ کے ایک شاپنگ مال میں ایک خاتون خریدار کے سامان کا بل ادا کیا تھا جس کے بعد سوشل میڈیا پر ان کی تعریفیں ہونے لگیں۔خبر رساں ادارے ’اے ایف پی‘ کے مطابق گزشتہ جیسنڈا آرڈرن شاپنگ کے لیے ایک سپر مارکیٹ پہنچیں، جہاں انہوں نے ایک خاتون کی جانب سے کی گئی تمام خریداری کا بل ادا کیا۔رپورٹ کے مطابق نیوزی لینڈ کی وزیراعظم نے اس وقت خاتون کا بل ادا کیا جب خاتون بل کی ادائیگی کے لیے کاؤنٹر پر پہنچیں تو انہیں احساس ہوا کہ وہ اپنا پرس گھر بھول آئی ہیں۔خریداری کرنے والی خاتون کے ساتھ ان کے 2 بچے بھی تھے اور انہوں نے پوری خریداری کرکے سامان پیک کروالیا تھا۔رپورٹ کے مطابق گھر پر پرس بھول آنے والی خاتون کے پیچھے جیسنڈا آرڈرن تھیں اور انہوں نے خریدار خاتون کا بل ادا کرکے ان کی مدد کی۔رپورٹ میں بتایا گیا کہ واقعے کے اگلے روز بعد خاتون نے مدد کرنے پر جیسندا آرڈرن کی تعریف میں فیس بک پر ایک پوسٹ لکھی جو دیکھتے ہی دیکھتے وائرل ہوگئی اور سب نیوزی لینڈ کی وزیر اعظم کی تعریفیں کرنے لگے۔خریدار خاتون کی مدد کرنے پر جب صحافیوں نے جیسنڈا آرڈرن سے پوچھا کہ انہوں نے ایک انجان خاتون کی مدد کیوں کی تو انہوں نے جواب دیا کہ ’چوں کہ وہ ایک ماں تھیں‘۔

متعلقہ خبریں