تبدیلی سرکار کی مہنگی تبدیلی : سکول جانے والے بچوں کے والدین کو بڑی مشکل میں ڈال دیا

2019 ,اپریل 4



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) مہنگائی پڑھائی کے آڑے بھی آگئی، کتاب خریدنا بھی عذاب ہوگیا۔ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ نے درسی کتب 12 فیصد تک مہنگی کر دیں۔کھانے پینے کے ساتھ پڑھنا لکھا بھی مہنگا ہو گیا، پنجاب بک بورڈ نے بھی بہتی گنگا میں ہاتھ دھو لیے، بچوں کی کتابوں کے دام بڑھا دیئے۔ کتابیں نا صرف مہنگی کی گئی ہیں بلکہ بازار میں دستیاب بھی نہیں جس کی باعث بچے، والدین دکانوں کے دھکے کھانے پر مجبور ہیں اور کتابیں سستی کرنے و بروقت فراہم کرنے کی دہائی دے رہے ہیں۔ذرائع کے مطابق پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ نے چھپائی کا ٹینڈر دینے میں تاخیر کی جس کی وجہ سے کورس کی کئی کتابیں بازار میں دستیاب نہیں۔ دوسری جانب خبر یہ بھی کہ وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین نے تمام مریضوں کو مفت ادویات کی فراہمی سے معذرت کرتے ہوئے کہا ہے کہ صرف ایمرجنسی اور اسپتالوں میں زیرعلاج مریضوں کو ہی دوا فراہم کی جائے گی۔وزیرصحت پنجاب ڈاکٹر یاسمین راشدکی تمام مریضوں کودوائیں فراہم کرنےسے معذرت کرتے ہوئے کہا کہ اگر سارا بجٹ بھی لگادیں تب بھی آؤٹ ڈور کے تمام مریضوں کو دوا فراہم نہیں کی جاسکتی۔اُن کا کہناتھا کہ اسپتال میں زیر علاج مریضوں کو ادویات فراہم کرنے کی صمہ داری حکومت کی ہے، ایمرجنسی، لیبر روم کے مریضوں کو ادویات مفت فراہم کی جائیں گی جبکہ او پی ڈی میں آنے والے مریض مفت دوا ملنے کی کوئی امید نہ رکھیں۔ادویات کی قیمتوں میں اضافے کے حوالے سے ڈاکٹر یاسمین راشد کا کہنا تھا کہ ’ڈالر کی قیمتیں بڑھنے اور روپے کی قدر کم ہونے کی وجہ سے ادویہ ساز کمپنیوں نے ریٹ بڑھا دیے‘ اور اب مہنگائی پڑھائی کے آڑے بھی آگئی، کتاب خریدنا بھی عذاب ہوگیا۔ پنجاب ٹیکسٹ بک بورڈ نے درسی کتب 12 فیصد تک مہنگی کر دیں۔کھانے پینے کے ساتھ پڑھنا لکھا بھی مہنگا ہو گیا، پنجاب بک بورڈ نے بھی بہتی گنگا میں ہاتھ دھو لیے۔

متعلقہ خبریں