لیگی رہنماء رانا ثناء اللہ نے آرمی چیف سے اپیل کردی

2019 ,جولائی 16



لاہور(مانیٹرنگ رپورٹ) منشیات سمگلنگ کے الزام میں پکڑے گئے مسلم لیگ ن کے صوبائی صدر رانا ثناءاللہ نے آرمی چیف سے اینٹی نارکوٹکس فورس سے متعلق نوٹس لینے کی درخواست کردی۔ عدالت پیشی کے موقع پر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثناءاللہ کاکہناتھاکہ ”میں چیف آف آرمی سٹاف سے ریکوئسٹ کروں گا کہ اے این ایف میں آرمی کے حاضر سروس لوگ کام کرتے ہیں،آپ اس بات کا نوٹس لیں، میں میجر جنرل آصف غفور سے بھی کہوں گا کہ جب آپ ہمیں پارلیمنٹ میں بریفنگ دینے آئے تھے توآپ نے کہاتھاکہ ہم نے سچ بول کر ہندوستان کیخلاف جنگ ہم نے جیتی ہے ، ہم نے قوم سے سچ بولا ہے ، سچ سرخروہوتاہے ۔ میں آصف غفور سے پوچھوں گا کہ آپ تک یہ سچ ابھی نہیں پہنچا، اس سچ کا بھی پتہ کریں اور اگر قوم تک نہیں تو کم ازکم اپنے چیف تک تو پہنچائیں“۔ اس موقع پر راناثناءاللہ نے وزیراعظم کے خون کے ٹیسٹ کروانے کا بھی مطالبہ کردیا اور کہاکہ میرا بلڈ ٹیسٹ کرائیں اگر سگریٹ کے اثرات نکلیں تو مجھے بغیرٹرائل کے سزا دے دیں۔

اگر نالائق اعظم کے بلڈ سے منشیات کے نمونے نہ نکلے تو بھی بغیر ٹرائل کے سزاءبھگتوں گا،کوئی سہولت نہ ملنے کا شکوہ نہیں کروں گامیں نے سوچ رکھا ہے کہ پاکستان میں ہی رہنا ہے،مجھ پر دباو ہے، جتنا بھی ظلم کرنا ہے کرلیں، حوصلے بلند ہیں ،ظلم کی دہائی دینے کی بجائے اسے للکارنا چاہیے،یہ ظلم اپنا عبرتناک انجام بھگتے گا۔ ان کامزید کہناتھاکہ جو مرضی کرلیں نوازشریف کے ساتھ ہوں،اپنی طرف سے ہیروئن ڈال کر اے این ایف نے اپنے منہ پر سیاہی ملی،چیف آف آرمی اسٹاف معاملے کا نوٹس لیں،اس کیس کے بعد یہ بتائیں اداروں کی تذلیل کون کرتاہے۔

    متعلقہ خبریں