جیا خان کی خودکشی کے ساڑھے چار سال بعد ملزم سامنے آ گیا، کس پر فردجرم عائد کی گئی ہے؟ ایسا نام سامنے آ گیا کہ پوری بالی ووڈ انڈسٹری ہل کر رہ گئی

2018 ,فروری 1



نئی دہلی (مانیٹرنگ ڈیسک): بالی ووڈ اداکارہ جیا خان کی خودکشی کے ساڑھے چار سال بعد ان کے سابق بوائے فرینڈ سورج پنچولی پر فردجرم عائد کر دی گئی ہے اور 17 فروری سے مقدمے کی سماعت شروع ہو گی۔


بھارتی خبر رساں ادارے ہندوستان ٹائمز کی ایک رپورٹ کے مطابق اداکار کے وکیل پرشانت پٹیل نے بتایا کہ ”سورج نے بے گناہی پر اصرار کیا جبکہ گواہوں پر جرح کا آغاز 17 فروری کو ہوگا۔“ 
بھارتی تحقیقاتی ادارے سی بی آئی کے مطابق سورج پنچولی نے پوچھ گچھ کے دوران حقائق پر پردہ ڈالا جبکہ پولی گراف یا برین میپنگ ٹیسٹ کا حصہ بننے سے بھی انکار کیا۔سی بی آئی کا کہنا تھا کہ جیا خان کی جانب سے تین صفحات پر لکھا گیا خط ممبئی پولیس نے اپنے قبضے میں لیا تھا جس میں اداکارہ نے سورج پنچولی کے ساتھ تعلق، مبینہ جسمانی اور ذہنی تشدد کا ذکر کیا جس کی وجہ سے انہوں نے خودکشی کی۔


سورج پنچولی کے والد ادتیہ پنچولی نے مقدمے کے آغاز پر خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ” ٹرائل کے آغاز پر ہم بہت خوش ہیں، ہم اس دن کا ساڑھے چار سال سے انتظار کررہے تھے، اب حقیقی ٹرائل شروع ہورہا ہے اور ہم جنگ لڑ سکیں گے۔ اگر ہم مجرم ہیں تو سورج کو ضرور سزا دیں، اگر ہم مجرم نہیں تو سورج کو ان الزامات سے بری کیا جائے۔
ہم بہت زیادہ تناﺅ سے گزرے مگر اکھٹے رہے اور فلمی صنعت کے دوست جیسے سلمان خان بھی ہمارے ساتھ تھے۔ ٹرائل ہمیشہ جاری نہیں رہے گا، سورج نوجوان ہے اور اس کے آگے پوری زندگی ہے۔“ 
خیال رہے کہ جیا خان نے 2013ءمیں خود کو پھندہ لگا کر خودکشی کر لی تھی اور اپنے آخری خط میں سورج پنچولی پر زندگی تباہ کرنے کا الزام عائد کیا تھا۔

متعلقہ خبریں