اسمبلی اجلاس کے دوران حنا ربانی کھر اور احسن اقبال سے اہم ترین چیز لینے کی ہدایت کردی گئی

2019 ,جون 14



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) قومی اسمبلی کے اجلاس کے دوران ڈپٹی سپیکر قاسم سوری نے  پیپلزپارٹی کی حنا ربانی کھر اور ن لیگ کے احسن اقبال کو موبائل فون کے ذریعے ویڈیو بنانے سے منع کردیا اور اسمبلی ملازمین کو ہدایت کی کہ موبائل لے کر ویڈیو ڈیلیٹ کردی جائے۔ قومی اسمبلی کے ڈپٹی سپیکر قاسم خان سوری کے زیرصدارت شروع ہوا تو ڈپٹی سپیکر باربار اپوزیشن لیڈر شہبازشریف کو تقریر کرنے کی ہدایت کرتے رہے جبکہ فواد چوہدری سمیت حکومتی اراکین کی نعرہ بازی اور ناموس رسالت پر بات کرنے کی اجازت نہ ملنے پر شہبازشریف نے بھی بات کرنے سے انکار کردیا، اس دوران حنا ربانی کھر اور احسن اقبال نے ویڈیو بناناشروع کی تو ڈپٹی سپیکر نے انہیں منع کردیا اور ویڈیو بنانے والوں سے موبائل لینے کی ہدایت کردی۔

ڈپٹی سپیکر کاکہناتھاکہ جو اراکین ویڈیو بنا رہے ہیں، ان سے موبائل فون لیے  جائیں اور وہ ویڈیوز ڈیلیٹ کی جائیں ۔ یاد رہے کہ ڈپٹی سپیکر کے باربار اسرار کے باوجود تحریک انصاف کے اراکین اور حکومتی وزراء اپنی اپنی نشستوں پر کھڑے ہوگئے اور شور شرابہ شروع کردیا، ڈپٹی سپیکر کے باربار اسرار پر شہبازشریف نے ایوان کو ان آرڈر کروانے تک تقریر سے انکار کردیا جبکہ ڈپٹی سپیکر بھی اس بات پر مصر رہے کہ اپوزیشن لیڈر سے بجٹ سیشن کا آغاز کروانا ہے ، اس کے بعد ہاوٌس اوپن ہوگا اور تمام لوگوں کو باری باری بولنے کی اجازت دی جائے گی ۔ 

    متعلقہ خبریں