عمران خان آجکل اندر سے بہت خوفزدہ ہیں کیونکہ۔۔۔۔۔۔ مسلم لیگ چھوڑنے والوں کے لیے مریم نواز نے اہم پیغام جاری کر دیا

2019 ,جولائی 1



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) مسلم لیگ ن کی مرکزی نائب صدر مریم نواز نے کہا ہے کہ ‏اندھے کو بھی نظر آ رہا ہے کہ ’جعلی اعظم‘ اور اس کی ’جعلی حکومت‘ خوفزدہ ہیں۔سماجی رابطے کی ویب سائٹ ٹویٹر پر اپنے بیان میں مریم نواز نے کہا کہ خوف اور گھبراہٹ میں وہ انتقامی کاروائیوں میں تیزی لانے کی بیوقوفانہ مگر ناکام کوشش کر رہے ہیں۔مریم نواز نے لکھا کہ یہ حرکتیں انشا اللہ ان کے اپنے زوال کا باعث ہوں گی۔کارکنوں کومخاطب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ آپ نے نا گبھرانا ہے نا ڈرنا ہے، شیرو ڈٹ کر مقابلہ کرنا ہے، جو جہاں جس پلیٹ فارم پر مقابلہ کر سکتا ہے وہاں ڈٹ کر مقابلہ کرنا ہے۔انہوں نے کہا کہ میدان عمل میں کیا کرنا ہے اس کی ٹائمنگ اور تفصیل کو وقت سے پہلے بیان نہیں کیا جا سکتا۔ میں اپنے آپ سے اور آپ سب سے وعدہ کر چکی کہ انشا اللہ نواز شریف کے لئے میں آخری حد تک جاؤں گی۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق سینئر صحافی و تجزیہ کار حامد میر نے مریم نواز کی جانب سے رانا ثناءاللہ کی گرفتاری کا الزام عمران خان پر عائد کیے جانے کو سیاسی بیان قرار دے دیا۔ حامد میر نے نجی ٹی وی جیو نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے مریم نواز کی جانب سے رانا ثناءاللہ کی گرفتاری کا الزام وزیر اعظم عمران خان پر عائد کیے جانے پر کہا کہ یہ مریم نواز کا سیاسی موقف ہے ان کو بھی پتہ ہے کہ رانا ثناءاللہ کی گرفتاری کس کے کہنے پر ہوئی ہے۔ رانا ثناءاللہ کی گرفتاری پر مریم نواز کے ٹویٹ سے یہ بھی پتا چل رہا ہے کہ وہ ان چند شخصیات میں سے ایک ہیں جو شہباز شریف، نواز شریف اور مریم نواز کے بہت قریب ہیں۔ رانا ثناءاللہ کو مریم نواز اور شہباز شریف کے درمیان ایک پل بھی کہا جاتا ہے،جس طرح مریم ان کی گرفتاری پر بات کر رہے ہیں اسی طرح شہباز شریف بھی بات کریں گے۔ جب وہ پنجاب کے وزیر داخلہ اور وزیر قانون تھے تو شہباز شریف پر کوئی بھی الزام لگتا تھا تو رانا ثناءاللہ پر بھی وہی الزام لگتا تھا۔ حامد میر نے کہا حکومت کوشش کر رہی ہے کہ ن لیگ کے ارکان اسمبلی کو اپنی صفوں میں شامل کیا جائے۔ رانا ثناءاللہ کو گرفتار کرنے کی یہ بھی وجہ ہوسکتی ہے کیونکہ انہوں نے کہا تھا کہ بطور صوبائی صدر مسلم لیگ ن وہ عوامی سطح پر ان ارکان اسمبلی کا محاسبہ کریں گے جنہوں نے عمران خان سے ملاقات کی ہے، شاید ان کا یہ بیان ہی ان کی گرفتاری کی وجہ بنا ہو۔خیال رہے کہ آج فیصل آباد سے لاہور آتے ہوئے اینٹی نارکوٹک فورس نے مسلم لیگ پنجاب کے صدر رانا ثنا ء اللہ کو گرفتار کر لیا ہے، انکی گاڑی سے منشیات بھی برآمد ہوئی جس کا وزن کیا جارہا ہے۔

متعلقہ خبریں