لاہور : سرکاری ہسپتالوں میں اہم ترین سہولت کو اچانک ختم کر دیا گیا ۔۔ غریب عوام نے سر پکڑ لئے

2019 ,اپریل 3



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) لاہور کے سرکاری اسپتالوں میں مریضوں کے لئےمفت ٹیسٹ کی سہولت ختم کر دی گئی،ٹیسٹوں کی فیسوں میں بھی اضافہ کردیا گیا ،مریض پریشان ہوگئے ۔لاہور کے سرکاری اسپتالوں سے مفت ٹیسٹ کی سہولت ختم ہوئی ،اب او پی ڈی میں آنے والےاور اسپتالوں میں داخل مریضوں کوہرٹیسٹ کا بل ادا کرنا پڑ رہاہے۔ مریضوں کاکہناہےکہ معمولی بلڈ ٹیسٹ ہو یا ایکسرے ، سبھی کی فیسیں وصول کی جا رہی ہیں جبکہ ٹوکن سسٹم اور طویل قطار کی خواری الگ ہے۔مریضوں نے یہ شکوہ بھی کہاکہ میو اسپتال میں ٹوکن دینے والا ملازم ڈیوٹی سے غائب ہے،صرف ٹوکن کےلئے غریب مریضوں کو طویل انتظار کرنا پڑتا ہے۔دوسری طرف میو اسپتال میں ٹیسٹوں کی ڈیوٹی پر مامور ملازمین نےبتایاکہ اب کوئی بھی ٹیسٹ مفت نہیں ہوتا۔مریضوں اور ان کے لواحقین کاکہناہےکہ مہنگی ادویات کے بعد ٹیسٹوں کی بڑھتی فیسوں نےکمر توڑ کر رکھ دی،ٹوکن کیلئے مردوں اور خواتین کو کئی کئی گھنٹےقطاروں میں لگنا پڑتا ہے، انہوں نے مفت ٹیسٹ کی سہولت برقرار رکھنے کا مطالبہ کیا، دوسری جانب خبر یہ ہے کہ پاکستان پیپلز پارٹی 12 اپریل کو گھوٹکی میں جلسہ عام کرے گی، چیئرمین بلاول بھٹو زرداری خطاب کریں گے۔یہ بات پاکستان پیپلز پارٹی سندھ کے صدر نثار کھوڑو نے گھوٹکی میں صوبائی وزیر ناصر شاہ، باری پتافی، محمد بخش مہر، وقار مہدی، راشد ربانی اور عاجز دھامرا کےہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی۔نثار کھوڑو کا کہنا تھا کہ گھوٹکی کے عوام اور ورکرز نے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری سے جلسہ کرنے کی درخواست کی تھی، بلاول بھٹو نے عوام کی درخواست پر حامی بھرتے ہوئے گھوٹکی میں جلسہ کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔انہوں نے بتایا کہ 4 اپریل کو شہید بھٹو کی 40 ویں برسی کے موقع پر جلسے کے انتظامات کو حتمی شکل دے دی گئی ہے، سندھ سمیت ملک بھر کی عوام محبت کا اظہار کرنے 4 اپریل گڑھی خدا بخش پہنچیں گے

متعلقہ خبریں