جہاز کے ذریعے پاکستان مخالف بینر لہرانے کا معاملہ، پاکستان نے ایسا قدم اٹھا لیا کہ دشمنوں کی نیندیں اڑگئیں

2019 ,جون 30



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) پاکستان نے پاک افغان میچ کے دوران پاکستان مخالف بینرز لہرانے اور شائقین میں جھگڑے پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے متعلقہ اتھارٹیز سے نوٹس لینے کا مطالبہ کیا ہے۔

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا ہے کہ پاکستان اور افغانستان کے درمیان میچ کے دوران ایک خاص گروہ کی طرف سے پاکستان مخالف بینرز لہرانے پر خدشات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ ایسے پروپیگنڈے کیلئے کھیلوں کے میدان استعمال کرنا ناقابل قبول ہے، معاملے کوسفارتی سطح پر اٹھادیا ہے۔ ترجمان نے کہا ہے کہ ہم سپورٹس سے متعلقہ اور قانون نافذ کرنیوالی اتھارٹیز سے نوٹس لینے کا مطالبہ کرتے ہیں، ایسا کرنے والے عناصر کو احتساب کے دائر ے میں لایا جائے۔ ترجمان کا کہنا تھا کہ معاملے کو سفارتی سطح پر اٹھایا گیا ہے ، ذمہ داران کو کٹہرے میں لایا جائے ، پاکستان کو شائقین کرکٹ کے درمیان جھگڑے پر بھی تشویش ہے۔

واضح رہے کہ پاکستان اور افغانستان کے میچ کے دوران سٹیڈیم کے اندر اور باہر افغان تماشائیوں نے جاہلیت کی تمام حدیں پار کرتے ہوئے پاکستانی شائقین پر حملے کیے اور انہیں زدو کوب کیا۔ بعض افغان شائقین تو سٹیڈیم میں کھلاڑیوں پر بھی حملہ آور ہوئے جس کے باعث پی سی بی نے آئی سی سی سے پاکستان ٹیم کی سکیورٹی بڑھانے کا مطالبہ کیا ہے۔میچ کے دوران دو بار ایسے لمحات بھی آئے جب ایک ہوائی جہاز کے ذریعے پاکستان مخالف پراپیگنڈے پر مبنی بینر سٹیڈیم کے اوپر سے لہرائے گئے۔

    متعلقہ خبریں