فیصل آباد میں 7سالہ بیٹے کے ہاتھوں ماں کے قتل کیس کا ڈراپ سین 16گھنٹے بعد شوہر کا اعتراف جرم، قتل کی شرمناک وجہ بھی بتا دی

2019 ,مارچ 27



فیصل آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) فائرنگ سے قتل ہو نے والی خاتون کا قاتل7 سالہ بیٹا نہیں شو ہر نکلا، 16گھنٹے بعدپو لیس حراست میں جرم کا اعتراف کرلیا تفصیل کے مطابق گز شتہ روزجھنگ روڈپر اچانک گو لی چلنے سے خاتون حنا فاطمہ کی ہلاکت کا فلاپ سین قاتل 7سا لہ بیٹا نہیں بلکہ خاتوں کاشوہر رضوان نکلا16گھنٹے بعد پو لیس حراست میں جرم کااعتراف آلہ قتل برآمد کرلیا گیا ۔مجرم نے اقبا لی بیان میں کہا کہ دوسری خواتین سے ناجائزتعلقات کی وجہ سے بیوی سے جھگڑارہتاتھا گز شتہ روزبھی اس بات پر جھگڑا ہوا طیش میں آ کر گو لی مار دی اور پسٹل اپنے 7سا لہ بیٹے کے ہا تھ میں تھمادیا تا کہ ساری بات معصوم بیٹے پر آجائے اور وہ ہر طرح سے محفوظ رہے پولیس تھا نہ جھنگ بازار نے زیر دفعہ302مقدمہ درج کر لیا۔ واضح رہے کہ فیصل آباد میں ایک افسوسناک واقعہ پیش آیا ہے جہاں ماں کی موت کا سبب اس کا اپنا 7 سالہ بیٹا بن گیا۔،میڈیا رپورٹس میں بتایا گیا ہے کہ فیصل آباد میں 7 سالہ بچے اذہان نے پستول سے ماں پر گولی چلا دی۔بچہ پستول کو کھلونا سمجھ کر کھیل رہا تھا۔گولی لگنے سے 27 سالہ خاتون جاں بحق ہو گئیں۔تاہم اب بچے کے ہاتھوں گولی لگنے سے ماں کے قتل کا معاملہ نیا رخ اختیار کر گیا ہے اور خاتون کے قتل کا شک ان کے اپنے شوہر پر جا رہا ہے۔خاتون کے اہل خانہ کا کہنا ہے کہ حنا اپنے بیٹے کے ہاتھوں غلطی سے گولی کا نشانہ نہیں بنی بلکہ حنا کو اس کے شوہر رضوان نے مارا ہے۔خاتون کی بہن کا کہنا تھا کہ حنا کا شوہر اس پر ظلم کرتا تھا اور ایک سال قبل بھی اس پر فائرنگ کی تھی جس کے بعد وہ خوفزہ ہو کر میرے گھر آ گئی تھی۔پولیس نے خاتون کے شوہر کو حراست میں لے لیا ہے اور تحقیقات کا آغاز کر دیا ہے۔تاہم خاتون کے شوہر کا کہنا ہے کہ وہ سو رہا تھا اور فائرنگ کی آواز سے آنکھ کھلی جب اٹھا تو بیوی کو خون میں لت پت پایا۔جس پر بڑے بیٹے نے بتایا کہ چھوٹے بھائی کے ہاتھوں پستول سے گولی چل گئی جس سے والدہ جاں بحق ہو گئیں۔پولیس ذرائع کے مطابق یہ واقعہ جھنگ بازار میں پیش آیا جب کہ لاش اپنی تحویل میں لے لی گئی ہے۔واضح رہے اس سے قبل بھی کئی ایسے واقعات پیش آ چکے ہیں۔جب پستول صاف کرتے ہوئے لوگ گولی کا نشانہ بن جاتے ہیں۔جب کہ اکثر اوقات ایسا بھی ہوتا ہے کہ بچے کھلونا سمجھ کر پستول سے کھیل رہے ہوتے ہیں کہ گولی چل جاتی ہے۔ایسا ہی ایک واقعہ آزاد کشمیر میں بھی پیش آیا تھا،آزاد کشمیر کے شہر پلندری میں کھیل کھیل میں 2سگی بہنوں کی جان چلی گئی، بچے اصلی پستول کو کھلونا پستول سمجھ کر کھیل رہے تھے کہ گولی چل گئی۔

متعلقہ خبریں