وہ جگہ جہاں ایک دن میں سورج 16 بار طلوع اور غروب ہوتا ہے

2018 ,اپریل 8



کیلیفورنیا (مانیٹرنگ ڈیسک) خلاء میں پہلا لگژری ہوٹل 2021ء میں مسافروں کو خوش آمدید کہنے کے لیے دستیاب ہوگا جہاں سے ایک دن میں 16 بار طلوع و غروب آفتاب کے مناظر دیکھے جاسکیں گے۔ دنیا کا پہلا لگژری خلائی ہوٹل ’اُو رَو را اسٹیشن‘ زمین کی سطح سے 200 میل اوپر مدار پر موجود ہو گا۔ اس ہوٹل میں جدید سہولیات سے لیس دو سویٹس دستیاب ہوں گے۔ یہ خلائی ہوٹل امریکی ٹیکنالوجی ’اوریو اسپین‘ کی معاونت سے تیار کیا جا رہا ہے جو 2021ء میں مکمل ہو جائے گا۔کیلی فورنیا میں پریس کانفرنس سے کرتے ہوئے خلائی تحقیق کرنے والی کمپنی ’اوریون اسپین‘ کے حکام کا کہنا تھا کہ 12 دنوں پر محیط خلاء کے دورے کے دوران مسافر جس پہلے لگژری ہوٹل میں قیام کریں گے وہ زمین کی سطح سے 200 میل اوپر مدار میں موجود ہو گا اور ہر 90 منٹ بعد مدار کا چکر لگائے گا جس کی وجہ سے ہوٹل میں مقیم افراد ہر چوبیس گھنٹے میں 16 بار سورج کو طلوع اور غروب ہوتے دیکھ پائیں گے۔اوریون اسپین کے بانی اور سی ای او فرنک بنگر نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ ہمارا مقصد خلاء کی دنیا تک زمین کے رہائشیوں کے لیے آسان رسائی مہیا کرنا ہے جس کے لیے بہترین خدمات اور اعلیٰ سہولیات فراہم کی جائیں گی۔ ’اُو رَو را اسٹیشن‘ کے قیام کے بعد خلاء میں مسافروں کی آمد و رفت کے لیے سروس کا بھی آغاز کریں گے جو ابسے پہلے کی سب سے ارزاں قیمت کی سروس ہو گی۔دو ہفتوں پر مشتمل خلائی ٹور اور ہوٹل میں قیام کے اخراجات 10 ملین ڈالر کے برابر ہیں جو کہ ایک عام آدمی کی دسترس سے باہر ہیں جس پر اوریون اسپین کے مالک کا کہنا تھا کہ خلاء میں جانے سے قبل 24 مہینوں پر مشتمل ٹریننگ دی جاتی تھی جسے مختصر کر کے تین مہینے پر محیط کردیا گیا ہے جس کے لیے ایک ماہر خلاء نورد کی خدمات حاصل کی جائیں گی اس لیے اخراجات یہاں تک پہنچے تاہم اب بھی یہ سب سے کم اخراجات ہیں۔دوسری جانب خبر کے مطابق زمین پر تو ایک سے بڑھ کر ایک شاندار اور خوبصورت ہوٹل بن چکا ہے لیکن ایک امریکی کمپنی نے پہلی بار خلاءمیں جا کر ہوٹل بنانے کا اعلان کر دیا ہے۔ یہ ایک خلائی سٹیشن ہو گا جس کا نام ’آروراسٹیشن‘ ہو گا اور یہ خلاءمیں قائم کیا جانے والا پہلا لگژری ہوٹل ہو گا۔

اس ہوٹل کی تعمیر ک لئے خلائی کمپنی اورئین سپین 2021ءمیں پہلا ماڈیولر سٹیشن خلا میں پہنچائے گی جبکہ اگلے سال سے مہمانوں کو خوش آمدید کہنے کا سلسلہ بھی شروع ہوجائے گا۔ یہ لگژری ہوٹل زمین سے 321 کلومیٹر کی دوری پر خلا میں گردش کرے گا۔ اس میں بیک وقت چھ افراد کے ٹھہرنے کی گنجائش ہوگی جو 12 دن تک خلائی ہوٹل میں قیام کرسکیں گے۔ خلائی ہوٹل میں جانے سے پہلے خلائی سفر کے لئے موزونیت کا ٹیسٹ کلئیر کرنا لازمی ہو گا۔ جو لوگ خلائی سفر کے ٹیسٹ میں کامیاب ہو جائیں گے وہ 12 دن کے خلائی قیام کے لئے روانہ ہو جائیں گے۔ خلائی ہوٹل میں ایک رات کے قیام کا کرایہ صرف 791666 ڈالر (تقریباً 8 کروڑ پاکستانی روپے) ہو گا۔

متعلقہ خبریں