عمران خان ایک ہفتے میں دوسری بار کل لاہور آئیں گے ۔۔۔ اس بار کیا بڑے کھڑاک کرنے والے ہیں ؟ خبر آتے ہی سب کی دوڑیں لگ گئیں

2019 ,مئی 10



لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک) وزیر اعظم عمران خان کل صوبائی دارالحکومت لاہور کا دورہ کریں گے، اس دوران وزیر اعظم گزشتہ اجلاسوں میں فیصلوں پر عملدر آمد کا جائزہ بھی لیں گے۔تفصیلات کے مطابق وزیر اعظم عمران خان کل صوبائی دارالحکومت لاہور کا دورہ کریں گے۔ وزیر اعظم پنجاب کابینہ کے متعدد وزرا سے ملاقات کریں گے جبکہ ان کے اور وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار کے درمیان بھی ملاقات ہوگی۔اپنے دورے کےدوران وزیر اعظم گزشتہ اجلاسوں میں فیصلوں پر عملدر آمد کا جائزہ بھی لیں گے۔اس سے قبل وزیر اعظم نے گزشتہ ماہ لاہور کا دورہ کیا تھا۔ گزشتہ دورے میں وزیر اعظم نے پارلیمانی پارٹی کے اجلاس کی صدارت کی تھی۔وزیر اعظم کو نیا پاکستان ہاؤسنگ پروجیکٹ میں ہونے والی پیشرفت، مزدوروں کے لیے لیبر کارڈ پالیسی اور پنجاب میں سیاحت کے حوالے سے نئے مقامات کی جائزہ رپورٹ بھی پیش کی گئی تھی۔اس سے قبل 30 مارچ کو وزیر اعظم نے لاہور میں جناح ایکسپریس ٹرین کا افتتاح کیا تھا، تقریب سے خطاب میں وزیر اعظم نے کہا تھا کہ پاکستان میں چین کی مدد سے ٹرینوں کاجال بچھا دیں گے، پاکستان میں تمام کمزور طبقے کو ہیلتھ کارڈ ملنا چاہیئے۔انہوں نے کہا تھا کہ اصولی طور پر مزدوروں کی تنخواہوں میں اضافے کے حق میں ہوں۔ جتنی مہنگائی ہے، مزدوروں کی تنخواہ بڑھنی چاہیئے، میں جھوٹے وعدے نہیں کروں گا، دوسری جانب ایک خبر یہ بھی تھی کہ وزیر اعظم عمران خان نے راولپنڈی میں گائنی اسپتال کا سنگ بنیاد رکھ دیا۔ وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ہماری کوشش ہوگی سرکاری اسپتالوں کو بہتر کریں۔ جہاں اسپتال کی ضرورت ہوگی وہاں اسپتال بنائیں گے۔وزیر اعظم عمران خان نے اسپتال اور نرسنگ ٹریننگ سینٹر کا افتتاح کیا۔تقریب کے میزبان وفاقی وزیر ریلوے شیخ رشید تھے، اس موقع پر وزیر اعلیٰ پنجاب عثمان بزدار نے بھی تقریب میں شرکت کی۔تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیر اعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ اسپتال کے لیے جدوجہد کرنے پر شیخ رشید کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں۔ اسپتال کے لیے پنجاب حکومت اور ہیلتھ ٹاسک فورس مدد کرے گی۔وزیر اعظم نے کہا کہ عوام کی بنیادی ضرورتیں پوری کرنے والے حکومت کی پہچان ہوتے ہیں، ہماری کوشش ہوگی سرکاری اسپتالوں کو بہتر کریں۔ جہاں اسپتال کی ضرورت ہوگی وہاں اسپتال بنائیں گے۔انہوں نے کہا کہ ہر غریب خاندان کے پاس 7 لاکھ 20 ہزار کا ہیلتھ انشورنس کارڈ ہوگا۔ ہیلتھ کارڈ کے ذریعے غریب خاندان کہیں سے بھی اپنا علاج کروا سکے گا۔وزیراعظم عمران خان نے کہا کہ ہم نے غریب خاندانوں کی مدد کرنی ہیں، تاکہ وہ کسی کے محتاج نہ ہوںعمران خان نے کہا کہ ہاؤسنگ اسکیم سے ان لوگوں کو گھر دیں گے جو اپنا گھر نہیں خرید سکتے، ہر انسان چاہتا ہے اس کے پاس چھت ہو اپنا گھر ہو، جب ہماری حکومت آئی تو 1300 ارب کے قرضے چڑھ چکے تھے۔وزیر اعظم کا کہنا تھا کہ ہر غریب خاندان کے پاس 7 لاکھ 20 ہزار کا ہیلتھ انشورنس کارڈ ہوگا۔ ہیلتھ کارڈ کے ذریعے غریب خاندان کہیں سے بھی اپنا علاج کروا سکے گا۔ احساس پروگرام کے ذریعے معاشرے میں نئی سوچ لا رہے ہیں۔ عام آدمی کی مشکلات حل کرنا حکومت کی ذمہ داری ہے۔انہوں نے کہا کہ بے گھر افراد کے لیے پناہ گاہوں میں اضافہ ہو رہا ہے مجھے خوشی ہے، نوجوانوں کو کاروبار کے لیے قرضہ فراہم کریں گے۔ غریب خاندانوں کی مدد کرنی ہے، دیہاتوں میں گائیں بھینسیں دیں گے۔ غریب خاندانوں کو بکریاں اور مرغیاں پالنے کے لیے دیں گے۔

متعلقہ خبریں