کنٹریکٹ پرملازمت کرنے والوں کی سالوں بعد سن لی گئی ۔۔۔ تبدیلی سرکار نے دل خوش کر دینے والا شاندار اعلان کردیا

2019 ,مئی 10



لاہور (مانیٹرنگ ڈیسک) حکومت پنجاب نے کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کے قوانین میں ترامیم کی منظوری دے دی۔کیبنٹ کمیٹی کی فیصلے پر کیبنٹ ونگ نے منٹس آف میٹنگ پر دستخط کردیئے۔جس کے مطابق چار سال سے کنٹریکٹ پر کام کرنے والے سرکاری ملازم کو اب تین سال بعد مستقل کیا جاسکے گا۔منظوری سے پنجاب بھر کے تمام محکموں کے سرکاری ملازمین استفادہ کرسکیں گے۔اس سے قبل کنٹریکٹ ملازمین کو مستقل کرنے کا چار سال کا ٹائم فریم رکھا گیا، یاد رہے کہ اس سے قبل یہ بھی خبر تھی کہ وفاقی حکومت نے آئندہ مالی سال2018۔19 کے وفاقی بجٹ میں سرکاری ملازمینکی تنخواہوں اورپنشن میں 15 سے 20 فیصد اورملازمین کودفتری اوقات کے بعد دفاتر میں ڈیوٹی دینے پرملنے والے الاؤنس، ہاؤس رینٹ سیلنگ سمیتدیگرالاؤنسزومراعات میں اضافے کی تجاویز پر غور شروع کردیاہے۔میڈیا رپورٹس کے مطابق وزارت خزانہمیں ابتدائی ورکنگ شروع کر دی گئی ہے، آئندہ ماہ کے وسط تک حتمی ورکنگ پیپرتیار کر کے خزانہڈویڑن کوبھجوا دیا جائیگا۔ وزارت خزانہ کے ریگولیشن ڈیپارٹمنٹ نے آئندہ وفاقی بجٹ میں سرکاری ملازمین کی تنخواہوں، ریٹائرڈملازمین کی پنشن میں اضافے کیلیے3 آپشنزپرمشتمل تجاویزمرتبکرناشروع کر دیہیں اورہرتجویزکیلیے درکارفنڈزکا تخمینہ بھی لگایاجارہاہے۔آئندہ بجٹ میں ملازمین کی تنخواہوں میں15 فیصدایڈہاک ریلیف والاؤنس اورپنشن میں20 فیصدتک اضافے کا امکان ہے جبکہ ملازمین کالیٹ سٹنگ اور میڈیکل الاؤنس بھی دیئے جائین ۔ اس سے بھی یہ خبر تھی کہ پاکستان ریلوے ملازمین انقلابی یونین کا ہنگامی اجلاس زیرصدارت مرکزی صدر مشتاق باجوہ ہوا تھا۔ اجلاس سے خطاب کرتے ہوئے مرکزی جنرل سیکرٹری رحمت علی‘ چیئرمین امجد علی ڈوگر‘ وائس چیئرمین محمد رمضان ارشد‘ خالد گجر‘ خالد پرویز ہاشمی‘ ظہیر بابر‘ پرور خان‘ الیاس خان‘ اعجاز احمد‘ اشفاق احمد‘ الیاس احمد‘ زبیر بٹ‘ عبدالصمد و دیگر قائدین نے کہا کہ ہم حکومت کے بجٹ سے پہلے اشیاء خورونوش‘ پٹرول و ڈیزل کی قیمتوں میں ہوشرباء اضافہ کی مذمت کرتے ہیں۔

متعلقہ خبریں