معروف اداکارہ حنا الطاف نے انتہائی دلخراش انکشاف کردیا

2018 ,ستمبر 15



لاہور (مانیٹرنگ رپورٹ) معروف اداکارہ حنا الطاف نے ایک انٹریو میں بتایا کہ انہوں نے گھریلو دباو اور والدہ کے انتہائی سخت اور تشدد آمیز رویے کی وجہ سے 21 برس کی عمر میں اپنا گھر چھوڑ دیا تھا۔ جبکہ ان کی والدہ اکثر اوقات یہ بھی کہہ دیتی تھیں کہ میں کام کیلئے نہیں جاتی بلکہ جسم فروشی کیلئے جاتی ہوں، میں جانتی ہوں انہو ں نے دانستہ طور پر نہیں کہا تھا ۔ انٹرویو دیتے ہوئے حنا الطاف کا کہناتھا کہ ان کی والدہ کو شیزوفرینیا (بھولنے) کی بیماری تھی اور وہ ذہنی طور پر بھی علالت کا شکار تھیں، جس کی وجہ سے انہیں بہت کچھ برداشت کرنا پڑا۔انہوں نے بتایا کہ جب وہ شوٹنگ یا ریکارڈنگ پر جاتی تھیں، اس وقت بھی وہ والدہ کا غصہ برداشت کرتیں اور مار بھی کھاتیں اور پھر یہی سلسلہ کام سے آنے کے بعد بھی جاری رہتا تھا۔

ان کاکہناتھا کہ وہ کراچی میں پیدا ہوئیں اور ان کے دوبھائی ہیں اور وہ اکیلی بہن ہیں ۔ انہوں نے بتایا کہ وہ محض 18 سال کی تھیں جس وقت انہوں نے بہت سی ذمہ داریاں اپنے کندھوں پر لے لیں تھیں ۔ان کا کہناتھا کہ میری والدہ مجھے بہت بہت زیادہ مارتی تھیں ، کبھی کبھی ایسا بھی ہوتا تھا کہ ان کی چوڑی ٹوٹ کر میرے چہرے پر لگ جاتی تھی اور وہاں سے خون نکل رہا ہوتا تھا اور مجھے شوٹنگ پر جانا ہوتا تھا تو وہاں پر پوچھتے تھے کہ کیا ہوا تو میرے پاس دینے کیلئے کوئی جوا ب نہیں ہوتا تھا ۔ان کا کہناتھا کہ اس طرح کی صورتحال میں آپ کا دل پھٹنے کو آجاتاہے آپ سے کام نہیں ہوتا ۔

متعلقہ خبریں