حاصل بزنجو کا بیان قابل مذمت،اداروں کے خلاف بات کرنےوالوں کے خلاف غداری کا مقدمہ ہونا چاہئے،غلام سرور خان

2019 ,اگست 3



اسلام آباد (مانیٹرنگ رپورٹ) وفاقی وزیر غلام سرور خان نے کہا ہے کہ حاصل بزنجو بھارت راکی زبان بولتے ہیں میں ان کی مذمت کرتاہوں ،اداروں کے خلاف بات کرنےوالوں کے خلاف غداری کا مقدمہ ہونا چاہئے، وفاقی وزیرغلام سرور خان نے پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہا کہ حاصل بزنجو نے ایسی بات کرکے بھارت کے موقف کو تقویت دی ہے،میر حاصل بزنجو کے بیان پر دکھ ہوا، ان کا کہناتھا کہ سینٹ انتخابات میں جہانگیر ترین کا کوئی رول نہیں تھا ۔

انتخابات شفاف ہوئے،انتخابات شفاف ہوئے ہیں کوئی ہارس ٹریڈنگ نہیں ہوئی ،وفاقی وزیر کاکہناتھا کہ سینیٹ میں چاروں صوبوں کی نمائندگی ہے ،سینیٹرز اپنی پارٹیوں کے ساتھ کھڑے ہوئے اور ووٹ ضمیر کے مطابق دیا،ہارس ٹریڈنگ کے الزامات پر افسوس ہوا، ن لیگ نے سیاستدانوں کو بدنام کیا ہے،انہوں نے کہا کہ عدم اعتماد کی تحریک وزیر اعظم، وزیر اعلیٰ اور اسپیکر قومی اسمبلی کیخلاف لائی جاتی ہے، چیئرمین سینیٹ کیخلاف عدم اعتماد کی اپوزیشن کی تحریک فیڈریشن کے خلاف تھی، فیڈریشن کے حق میں رہنے والے سینیٹرز کو خراج تحسین پیش کرتا ہوں ،وفاقی وزیر کا کہناتھا کہ اپوزیشن ایک پیج پر نہیں ہے، اپوزیشن حکومت کے خلاف ایک پلیٹ فارم پر جمع ہونے میں ناکام ہو گئی ، انہوں نے کہا کہ نواز شریف اور زرداری نے جمہوریت کے نام پر پاکستان کو کمزور کیا۔

    متعلقہ خبریں