شاہ رخ خان نئی مشکل میں پھنس گئے

2018 ,جنوری 31



ممبئی(مانیٹرنگ ڈیسک): بھارتی انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ نے بالی ووڈ کنگ شاہ رخ خان کا  فارم ہاؤس ضبط کرلیا۔ نامور بالی ووڈ اداکار شاہ رخ خان بھارتی انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ کے نشانے پر آگئے۔ انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ نے کنگ خان پربڑی کارروائی کرتے ہوئے ممبئی کے نواحی علاقے علی باغ میں کھیتی باڑی کی زمین پر بنگلہ بنانے کے جرم میں کنگ خان کے فارم ہاؤس کو ضبط کرلیا ہے۔ بےنامی پراپرٹی ٹرانزیکشن ایکٹ کے تحت یہ کارروائی ہوئی ہے۔ گزشتہ برس دسمبرمیں انکم ٹیکس کی جانب سے شاہ رخ کو نوٹس جاری کیا گیا تھا تاہم کوئی جواب موصول نہ ہونے پر کارروائی کی گئی۔

بھارتی میڈیا کے مطابق اس اراضی کو خریدنے کے لیے’’دیجاوو فارمزنامی‘‘کمپنی بنائی گئی اور ایک کسان سے یہ پراپرٹی کھیتی باڑی کرنے کے لئے خریدی گئی۔ اس کمپنی میں پہلے تین بورڈ آف ڈائریکٹرز تھے بعد ازاں شاہ رخ خان نےاس کمپنی کو بھاری قرضہ دلوایا اور اس کمپنی کے شیئرز شاہ رخ خان اور ان کے خاندان کے لوگوں کے نام پر منتقل ہوگئے۔ یہی وجہ ہے کہ یہ بنگلہ بے نامی قانون کے تحت سیل کیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق کھیتی باڑی کرنے کے لیے لی گئی اس جگہ پر کبھی کھیتی باڑی نہیں ہوئی بلکہ اس زمین پر ایک پرتعیش فارم ہاؤس بنادیا گیا۔ انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ نےشاہ رخ خان سے 90 روز میں جواب طلب کیا ہے جبکہ کنگ خان اپنی جائیداد کی بحالی کے لیے انکم ٹیکس ڈیپارٹمنٹ میں اپیل بھی کرسکتے ہیں۔

20 ہزار اسکوائر میٹر پر پھیلی اس اراضی میں مختلف سہولیات کے ساتھ ایک ہیلی پیڈ بھی موجود ہے اور اس کی سرکاری قیمت 14 کروڑ 67 لاکھ روپے ہے۔ شاہ رخ خان اکثر اہم تقریبات کا اہتمام بھی اسی فارم ہاؤس پرکرتے ہیں۔ انہوں نے اپنی 52 ویں سالگرہ بھی اسی فارم ہاؤس میں منائی تھی۔

متعلقہ خبریں