محسن داوڑ کو شمالی وزیر ستان سے گرفتار کر نے کے بعد کہاں پہنچا دیا گیا ؟ پتا چل گیا

2019 ,مئی 30



بنوں (مانیٹرنگ رپورٹ) بنوں کی انسدادد ہشتگردی کی عدالت نے پی ٹی ایم کے رہنما محسن داوڑ کو 8 روزہ جسمانی ریمانڈ پر سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا ہے۔ تفصیلات کے مطابق چیک پوسٹ حملے کے بعد محسن داوڑ مفرو ہو گئے تھے تاہم تین روز کے بعد انہیں شمالی وزیر ستان سے گرفتار کر لیا گیا ہے جس کے بعد انہیں بنوں کی انسداد دہشتگردی کی عدالت میں پیش کیا گیا جہاں ان کے جسمانی ریمانڈ کی استدعا کی گئی جسے عدالت نے منظور کرتے ہوئے 8 روز کیلئے محسن داوڑ کو سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا ہے۔

    یاد رہے کہ گزشتہ اتوار کے روز محسن داوڑ اور علی وزیر کی قیاد ت میں گروہ نے پاک فوج کی خر کمر میں واقع چیک پوسٹ پر حملہ کیا ، فائرنگ کے باعث آرمی کے پانچ اہلکار زخمی ہوئے جن میں سے ایک جوان زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے اگلے روز شہید ہو گیا تاہم حملے کے وقت پاک فوج کی جانب سے جوابی کارروائی کی گئی جس میں تین افراد ہلاک اور دس زخمی ہوئے۔ پاک فوج نے کارروائی کرتے ہوئے علی وزیر کو فوری موقع سے حملہ آوروں کے ہمراہ گرفتار کر لیا تھا تاہم محسن داوڑ موقع سے فرار ہونے میں کامیاب ہوگئے اور مقامی آباد میں جا کر روپوش ہوگئے تاہم تین روز تک چھپے رہنے کے بعد آخر کار وہ سیکیورٹی فورسز کے ہتھے چڑھ گئے۔

    یہاں یہ امر بھی قابل ذکر ہے کہ محسن داوڑ نے گزشتہ روز ایک غیر ملکی اخبار کو انٹریو بھی دیا تھا جس میں انہوں نے مطالبہ کیا تھا کہ پاک فوج کو وزیر ستان سے نکل جانا چاہیے ۔

    متعلقہ خبریں