مودی نے تحریک انصاف کے ایم این اے رمیش کمار کو ۔۔۔ بھارت سے ایسی خبر آگئی کہ وزیراعظم عمران خان بھی حیران رہ گئے

2019 ,فروری 24



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) تجزیہ کار ایاز امیر نے کہاہے کہ اہم بات یہ ہے کہ وزیراعظم مودی نے تحریک انصاف کے ایم این اے رمیش کمار کو وقت دیاہے ، یہ اہم بات ہے ، بھارت کے سمجھ رکھنے والے طبقے کوآگاہی ہے۔ نجی ٹی وی کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے ایاز امیر نے کہا کہ مقبوضہ کشمیر کامسئلہ جلد حل ہونے والا نہیں ہے ، یہ پاکستان اور بھارت سے دانشمندی کا تقاضہ کرتاہے ۔انہوں نے کہا جیسے بیانات ہم دیتے ہیں ایسے بیانات ہندوستانی دیتے ہیں کہ یہ اٹوٹ انگ ہے ، یہ سب بکواس ہے ، ہم نے بزور بازو کشمیر حاصل کرنے کی کوشش کی لیکن کامیابی نہ ہوئی ، بھارت نے طاقت کے ذریعے کشمیریوں کو دبانے کی کوشش کی ۔ انہوں نے کہا کہ یہ بھارت کے سیاستدانوں کی ناکامی ہے کہ وہ مسئلہ کشمیر حل نہیں کرسکے لیکن ہم بھی بزور شمشیر کشمیر کو آزاد نہیں کرواسکے، اہم بات یہ ہے کہ وزیر اعظم مودی نے تحریک انصاف کے ایم این اے رمیش کمار کو وقت دیاہے ، یہ اہم بات ہے ، بھارت کے سمجھ رکھنے والے طبقے کوآگاہی ہے کہ پاکستان کی موجودہ سیاسی قیادت پاک بھارت تناﺅ کم کرنا چاہتی ہے ۔ جبکہ دوسری جانب تجزیہ کار ہارون الرشید نے کہاہے کہ، کوئی جنگ نہیں ہوگی اور چھوٹا موٹا واقعہ بھی نہیں ہوگا ، معاملہ ٹھنڈا ہوجائے گا، کشمیری قیادت بھی عقلمندی کا مظاہرہ کرے تو داخلی خود مختاری پہلا اقدام ہوسکتاہے ، جتنی شہادتیں ہو رہی ہیں ، انسانی زندگیوں کو سنجیدگی سے لینا چاہئے۔ دنیا نیوز کے پروگرام ”تھنک ٹینک“ میں گفتگو کرتے ہوئے ہارون الرشیدنے کہا کہ جنگ ہوئی تو پاکستان کا نقصان ہوگا لیکن شائننگ انڈیا کہاں جائے گا ؟اس وقت ہندوستانی قیادت کو جذبات نے یرغمال بنایا ہواہے ، جنگ کسی طرح بھی خطے کیلئے مناسب نہیں ہے ۔ انہوں نے کہا کہ آرمی چیف کا پیغام کے خطے ترقی کرتے ہیں ، میرا خیال ہے کہ چیزیں اس طرف جا رہی ہے ، کوئی جنگ نہیں ہوگی اور چھوٹا موٹا واقعہ بھی نہیں ہوگا ، معاملہ ٹھنڈا ہوجائے گا ۔ انہوں نے کہا کہ کشمیری قیادت بھی عقلمندی کا مظاہرہ کرے تو داخلی خود مختاری پہلا اقدام ہوسکتاہے ، جتنی شہادتیں ہو رہی ہیں ، انسانی زندگیوں کو سنجیدگی سے لینا چاہئے۔ ان کا کہنا تھا کہ اس وقت حکمت اور تدبر سے کام لینا چاہئے ، جدید جنگیں بہت ہولناک ہیں ، یہ جو جنگ کی باتیں کرتے ہیں ، ان کی جانب سے جنگیں دیکھی نہیں گئیں بلکہ تاریخ میں پڑھی ہیں لیکن اگر جنگ آپڑے تو پھر ایسا ہونا چاہئے کہ انڈیا ہمیشہ ہمیشہ یاد رکھے ۔

متعلقہ خبریں