مولانا فضل الرحمان کو (ن)لیگ نے کرایے پر حاصل کیا اور اس سے کیا کام کروایا کرتی تھی؟؟؟ ‘‘ فواد چودھری کے تہلکہ خیز انکشافات نے سوشل میڈیا پر تھر تھلی ڈال دی

2019 ,جولائی 29



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) وفاقی وزیر برائے سائنس وٹیکنالوجی فواد چودھری کا کہنا ہے کہ مسلم لیگ (ن) نے مولانا فضل ا لرحمان کو کرایہ پر حاصل کر رکھا ہے۔میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے فوادچودھری کا کہناتھا کہ کرایہ داری ایکٹ کا نفاذ مولانا فضل الرحمان پر ہونا چاہیے کیونکہ مسلم لیگ (ن) نے انھیں کرایے پر حاصل کر رکھا ہے۔ فوادچودھری نے مزید کہا کہ فضل الرحمان کا کام پیپلزپارٹی اور مسلم لیگ (ن)کے درمیان رشتے کروانے والی مائی کا ہے۔ اپوزیشن کو چاہیے کہ ان کے ہاتھوں میں نہ کھیلے۔وہ آج کل اسلام کا استعمال کررہے ہیں اس لئے انھیں ہر طرف کیڑے نظر آرہے ہیں ،نواز شریف اور آصف زرداری پر مقدمات سابق ادوار میں بنے اور تفتیش بھی ان مقدمات کی ہو رہی ہے جو سابق دور میں بنے۔انہوں نے کہا کہ حکومت پر میڈیا اور سوشل میڈیا پر پابندی کا الزام بے ہودہ ہے کیونکہ تحریک انصاف تو خود میڈیا کی حامی ہے اور میڈیا کے بغیر پی ٹی آئی کچھ نہیں تھی تاہم ہم جھوٹی خبروں کا تدارک کر رہے ہیں۔وفاقی وزیر نے کہا کہ کراچی میں پانی کا مسئلہ انتہائی گھمبیر صورتحال اختیار کر چکا ہے جو صوبائی حکومت سے حل نہیں ہو رہا۔ عالمگیر خان کا پانی کے مسئلہ پر احتجاج بالکل درست تھا۔انہوں نے کہا کہ پاکستان اور افواج پاکستان کے وقار کا خیال رکھنا انتہائی ضروری ہے جبکہ ہمیں سب سے زیادہ ٹوٹی پھوٹی خارجہ پالیسی ورثے میں ملی تھی۔ جبکہ دوسری جانب ایک خبر کے مطابق جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ تاریخی ملین مارچ نے ثابت کر دیا کہ بلوچستان کے عوام جمعیت علماء اسلام کے ساتھ ہیں اور یہودی لابی کو کسی بھی صورت مزید حکومت نہیں ہونے دینگے اسٹیبلشمنٹ نے جعلی مینڈیٹ کے ذریعے موجودہ حکومت کو مسلط کیا۔ ملک کی تمام سیاسی جماعتیں چاہتی ہیں کہ حکومت استعفی دے اور نئے سرے سے صاف اور شفاف انتخابات کرائے جائیں۔ ان خیالات کااظہار انہوں نے کوئٹہ میں پشتونخوا ملی عوامی پارٹی کے مرکزی رہنماء سید علاؤ الدین آغا کے دو ہزار ساتھیوں سمیت جمعیت علماء اسلام میں شمولیت کے موقع پر جلسے سے خطاب کرتے ہوئے کیا اس موقع پر جمعیت علماء سلام کے صوبائی امیر مولانا عبدالواسع،حافظ محمد یوسف،مولانا کمال الدین،حافظ عبدالقدیم،ضلعی امیر کوئٹہ مولانا عبدالرحمان نے بھی خطاب کیا جبکہ اپوزیشن لیڈر ملک سکندر ایڈووکیٹ اکرم خان درانی،مولوی عطاء الرحمان،سید فضل آغا،اصغر علی ترین،ارشد سومروہ،مولانا صلاح الدین،مولانا عصمت اللہ،مولوی محمد حنیف،سید مطیع اللہ آغابھی موجود تھے سید علاء الدین آغا نے اپنی رہائش گاہ پر جمعیت علماء اسلام کے مرکزی امیر مولانا فضل الرحمان اور دیگر قائدین کے اعزاز میں عشائیہ بھی دیا جمعیت علماء اسلام کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے کہا ہے کہ ملک بھر میں ایک سازش کے تحت جعلی انتخابات کرائے گئے بلوچستان میں یہاں ہمیشہ جمعیت علماء اسلام کامیابی سے ہمکنار ہوتے مگر اس مرتبہ ایک ایسی پارٹی کو اقتدار حوالے کیا گیا جن کا بلوچستان میں وجود نہیں تھا اگر اس طرح جعلی مینڈیٹ کے لوگوں کو عوام پر مسلط کرتے ہیں تو پھر نہ پاکستان ترقی کرے گا اور نہ بلوچستان ترقی کرے گا جمعیت علماء اسلام نے ہمیشہ ملک اور بلوچستان کی خاطر بہت قربانیاں دی ہیں کیونکہ جب تک حقیقی نمائندوں کو یہاں نمائندگی نہیں دی جاتی اس وقت تک حالات ٹھیک نہیں ہوسکتے اسٹیبشلمنٹ نے عمران خان کو اقتدار حوالے کر کے یہاں پر آئین کی خلاف ورزی کی جارہی ہے قادیانیوں اور یہودی لابی کو مسلط کررہے ہیں جو ہم ہر گزبرداشت نہیں کرینگے انہوں نے کہا کہ ان کی سربراہی میں اسلام آباد میں جو آل پارٹیز کانفرنس منعقد ہوئی اس میں ملک کی تمام سیاسی جماعتوں کا اس بات پر اتفاق تھا کہ 25جولائی کو ہونے والے انتخابات میں دھاندلی ہوئی۔ ملک کی تمام سیاسی جماعتیں چاہتی ہیں کہ حکومت استعفی دے اور نئے سرے سے صاف اور شفاف انتخابات کرائے جائیں۔

متعلقہ خبریں