آصف زرداری اور فریال تالپور کو اب تک کا سب سے بڑا جھٹکا ۔۔۔۔ نیب کے فیصلے نے پوری پیپلز پارٹی میں ہلچل مچادی

2019 ,اپریل 2



اسلام آباد(مانیٹرنگ ڈیسک) سندھ ہائی کورٹ نے جعلی اکاﺅنٹس کیس کی کراچی سے راولپنڈی منتقل کرنے کے فیصلے کے خلاف آصف زرداری اور فریال تالپور کی درخواستیں مسترد کردی ہیں. تفصیلات کے مطابق سندھ ہائی کورٹ نے جعلی اکاﺅنٹس کیس اور دیگر مقدمات کی منتقلی کے خلاف سابق صدر آصف زرداری اور فریالپور کی درخواستیں مسترد کردی ہیں.عدالت نے فریقین کے دلائل سننے کے بعد کیس میں مختصر حکم سناتے ہوئے بینکنگ کورٹ کا مقدمہ منتقلی کا حکم برقرار ہے، تفصیلی فیصلہ بعد میں جاری کیا جائے گا.واضح رہے کہ سابق صدر آصف زرداری، فریال تالپور، انور مجید اور دیگر نے جعلی اکاﺅنٹس اور دیگر مقدمات کی نیب راولپنڈی منتقلی کے فیصلے کو چیلنج کرتے ہوئے سندھ ہائیکورٹ میں درخواستیں دائر کی تھیں. دوسری جانب نیب ایگزیکٹو بورڈ نے جعلی اکاﺅنٹس کیس سے متعلق ریفرنسز کی باضابطہ منظوری دے دی ہے. نیب اعلامیے کے مطابق چیئرمین قومی احتساب بیورو جسٹس ریٹائرڈ جاوید اقبال کی سربراہی میں نیب کے ایگزیکٹو بورڈ کا اجلاس ہوا جس میں بدعنوانی کے 6 ریفرنس دائرکرنے کی منظوری دی گئی.ایگزیکٹو بورڈ نے سابق سیکرٹری ورکرزویلفیئرفنڈ افتخاررحیم ودیگرکے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی، ملزمان پر فراڈ سے قومی خزانے کو466 ملین روپے کا نقصان پہنچانے کا الزام ہے. سی ڈی اے کے سابق ڈائریکٹرغلام سرورسندھو ودیگر کے خلاف ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی، جن پرڈپلومیٹک انکلیوژ میں شٹل سروس کیلئے 4.5 ایکڑ اراضی الاٹ کرنے کا الزام عائد کیا گیا ہے جبکہ اراضی کی الاٹمنٹ سے قومی خزانے کو 408.32 ملین روپے کا نقصان پہنچا.سابق ایڈمنسٹریٹرکے ایم سی حسین سید ودیگر، سی ای اواومنی گروپ خواجہ عبدالغنی مجید ودیگرکے خلاف اراضی ریگولرائزیشن کا ریفرنس دائرکرنے کی منظوری دی گئی، اراضی کی ریگولرائزیشن سے خزانے کو1.422 ارب روپے کا نقصان پہنچا جب کہ علی گوہر ڈاہری ودیگر کے خلاف بھی غیر قانونی بھرتیوں کا ریفرنس دائر کرنے کی منظوری دی گئی۔

متعلقہ خبریں