وفاقی وزیر ’ علی محمد خان‘ بھی مستعفی ۔۔۔؟؟ سیاست سے کنارہ کشی کا عندیہ بھی دے دیا

2019 ,مئی 1



اسلام آباد (مانیٹرنگ ڈیسک) پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار نے کہا ہے کہ 18سال سے کم عمر کی شادی پر پابندی کا بل قومی اسمبلی میں پیش کیا، اپوزیشن جماعتوں کے تعاون کا مشکور ہیں۔ منگل کو پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اٹھارہ سال سے کم عمر بچے کا شناختی کارڈ نہیں بنایا جاتا، ڈرائیونگ لائسنس نہیں بنایا جا سکتا تو کم عمر کو اپنی شادی جیسے بڑے فیصلے کی اجازت کیسے دی جا سکتی۔انہوں نے کہا کہ بل کی حمایت کرنے پر اپوزیشن کا شکریہ ادا کرتا ہوں، اپوزیشن حمایت نہ کرتی تو یہ بل کمیٹی کو نہ بھیجا جاتا، اقلیتی برادری سے ہونے کا مطلب یہ نہیں کہ میں انسانی حقوق پر بات نہیں کر سکتا۔ڈاکٹر رمیش نے کہا کہ چند منفی ذہنیت رکھنے والوں کے باعث پاکستان کا امیج خراب ہو رہا ہے، میرے اپنے اصول ہیں، ان پر قائم رہتا ہوں پانامہ کا معاملہ آیا تو اس پر بھی کھل کر بات کی تھی۔انہوں نے کہا کہ بروقت درست فیصلوں کی ضرورت ہے، رائٹ مین فار رائٹ جاب پر عمل کرنا ہوگا۔ پاکستان تحریک انصاف کے رکن قومی اسمبلی ڈاکٹر رمیش کمار نے کہا ہے کہ 18سال سے کم عمر کی شادی پر پابندی کا بل قومی اسمبلی میں پیش کیا، اپوزیشن جماعتوں کے تعاون کا مشکور ہیں۔ منگل کو پارلیمنٹ ہاؤس کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ اٹھارہ سال سے کم عمر بچے کا شناختی کارڈ نہیں بنایا جاتا، ڈرائیونگ لائسنس نہیں بنایا جا سکتا تو کم عمر کو اپنی شادی جیسے بڑے فیصلے کی اجازت کیسے دی جا سکتی۔انہوں نے کہا کہ بل کی حمایت کرنے پر اپوزیشن کا شکریہ ادا کرتا ہوں، اپوزیشن حمایت نہ کرتی تو یہ بل کمیٹی کو نہ بھیجا جاتا، اقلیتی برادری سے ہونے کا مطلب یہ نہیں کہ میں انسانی حقوق پر بات نہیں کر سکتا۔ ڈاکٹر رمیش نے کہا کہ چند منفی ذہنیت رکھنے والوں کے باعث پاکستان کا امیج خراب ہو رہا ہے، میرے اپنے اصول ہیں، ان پر قائم رہتا ہوں پانامہ کا معاملہ آیا تو اس پر بھی کھل کر بات کی تھی۔ انہوں نے کہا کہ بروقت درست فیصلوں کی ضرورت ہے، رائٹ مین فار رائٹ جاب پر عمل کرنا ہوگا۔

متعلقہ خبریں