رات کی سب سے بڑی خبر : آصف زرداری کی گرفتاری کی تاریخ سامنے آگئی ، پورے ملک میں ہلچل مچ گئی

2019 ,مارچ 18



راولپنڈی (مانیٹرنگ ڈیسک) آصف زرداری کی گرفتاری کی ممکنہ تاریخ سامنے آگئی، نیب نے سابق صدر اور ان کے صاحبزادے بلاول زرداری سے پوچھ گچھ کیلئے سوال نامہ تیار کرکے دونوں کو 20 مارچ کو طلب کرلیا، شہباز شریف، خواجہ سعد رفیق اور علیم خان کی طرح دوران پیشی آصف زرداری کو بھی گرفتار کیا جا سکتا ہے۔  جعلی اکاؤنٹس کیس کے سلسلے میں نیب نے سابق صدر اور پیپلز پارٹی کے شریک چئیرمین آصف علی زرداری اور بلاول کیلئے سوالنامہ تیار کر لیا ہے۔ نیب کی ٹیم کی جانب سے آصف زرداری اور بلاول زرداری سے 100 سوالات پوچھے جائیں گے۔ نیب کی مشترکہ تحقیقاتی ٹیم 20 مارچ کو سوالنامہ آصف زرداری اور بلاول زرداری کے حوالے کرے گی۔ ذرائع کے مطابق آصف زرداری اور بلاول بھٹو سے پارک لین کمپنی کے سوالات ہوں گے، پارک لین کمپنی میں اربوں روپے کی ٹرانکزیکشن جعلی اکاؤنٹس سے کی گئی، آصف زرداری نے پارک لین کمپنی 1989ء میں مبینہ فرنٹ مین اقبال میمن کے ذریعے خریدی، 2009ء میں آصف زرداری اور بلاول بھٹو کمپنی کے شیئر ہولڈر بنے، آصف زرداری اور بلاول بھٹو 25، 25 فیصد کے شیئر ہولڈر ہیں۔ ذرائع کے مطابق آصف زرداری بطور کمپنی ڈائریکٹر اکاونٹس استعمال کرنے کا اختیار رکھتے تھے، پارک لین کمپنی کی 2008ء کی دستاویز پر آصف زرداری کے بطور ڈائریکٹر دستخط ہیں، پارک لین کمپنی نے قرضوں کی مد بھی بینکوں سے اربوں روپے لئے۔ یہاں یہ بات واضح رہے کہ 20 مارچ کو نیب کی ٹیم کی پیشی کے موقع پر آصف زرداری اور بلاول بھٹو دونوں کی گرفتاری بھی عمل میں آ سکتی ہے۔ اس حوالے سے تجزیہ کاروں کا کہنا ہے کہ نیب کے پاس دونوں رہنماوں کو گرفتار کرنے اک اختیار موجود ہے۔ ماضی میں شہباز شریف، خواجہ سعد رفیق اور علیم خان کو پیشی کیلئے بلا کر گرفتار کیا جا چکا ہے۔ یوں ہی 20 مارچ کی پیشی کی دوران آصف زرداری کو بھی گرفتار کیا جا سکتا ہے۔ تاہم اس حوالے سے نیب کی جانب سے کسی قسم کا کوئی باضابطہ اعلان نہیں کیا گیا۔

متعلقہ خبریں